Tery Dam Say Hi Zindagi Zindagi Hay

ترے دم سے ہی زندگی زندگی ہے

ترے دم سے ہی زندگی زندگی ہے

ترا غم سلامت مجھے کیا کمی ہے

خرد دل سے تکرار کیوں کررہی ہے

کہا نا ! یہی ہے، یہی ہے، یہی ہے

نگاہوں میں جب سے بسایا ہے تم کو

کوئی آرزو اب نہ باقی رہی ہے

میرے پاس ہے دولت عشق وافر

بتا میرے ہمدم تجھے کیا کمی ہے

چلو سیکھ آتے ہیں آداب ان سے

سنا ہے کہ پھر وہاں محفل سجی ہے

چراغوں کے بدلے یہ دل جل رہا ہے

اسے حاسدوں کی نظر لگ گئ ہے

تری یاد ہے خالی کمرے میں ہر سو

مری خلوتیں ہیں مری ڈائری ہے

وہ لوٹ آئے تھک کے جفاؤں سے اپنی

تمنا یہی اب تو باقی بچی ہے

کروں لاکھ سجدے میں قدموں میں ماں کے

یہاں ایک جنت کی کھڑکی کھلی ہے

حیاء غزل

حیاء غزل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(928) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Poetry of Haya Ghazal, Tery Dam Say Hi Zindagi Zindagi Hay in Urdu. Also there are 4 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Haya Ghazal.