بند کریں
شاعری عرفان صدیقی

ہوشیاری دل نادان بہت کرتا ہے

-

hoshiyari dil e nadaan


(396) ووٹ وصول ہوئے

: متعلقہ عنوان