Misal Dast Zulekha Tapaak Chahta Hai

مثال دست زلیخا تپاک چاہتا ہے

مثال دست زلیخا تپاک چاہتا ہے

یہ دل بھی دامن یوسف ہے چاک چاہتا ہے

دعائیں دو مرے قاتل کو تم کہ شہر کا شہر

اسی کے ہاتھ سے ہونا ہلاک چاہتا ہے

فسانہ گو بھی کرے کیا کہ ہر کوئی سر بزم

مآل قصۂ دل دردناک چاہتا ہے

ادھر ادھر سے کئی آ رہی ہیں آوازیں

اور اس کا دھیان بہت انہماک چاہتا ہے

ذرا سی گرد ہوس دل پہ لازمی ہے فرازؔ

وہ عشق کیا ہے جو دامن کو پاک چاہتا ہے

احمد فراز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2006) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ahmed Faraz, Misal Dast Zulekha Tapaak Chahta Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 154 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ahmed Faraz.