Dil Aik Nayi Dnaye Maani Se Milla Hai

دل اک نئی دنیائے معانی سے ملا ہے

دل اک نئی دنیائے معانی سے ملا ہے

یہ پھل بھی ہمیں نقل مکانی سے ملا ہے

جو نام کبھی نقش تھا دل پر وہ نہیں یاد

اب اس کا پتا یاد دہانی سے ملا ہے

یہ درد کی دہلیز پہ سر پھوڑتی دنیا

اس کا بھی سرا میری کہانی سے ملا ہے

کھوئے ہوئے لوگوں کا سراغ اہل سفر کو

جلتے ہوئے خیموں کی نشانی سے ملا ہے

خاطر میں کسی کو بھی نہ لانے کا یہ انداز

بپھری ہوئی موجوں کی روانی سے ملا ہے

لفظوں میں ہر اک رنج سمونے کا قرینہ

اس آنکھ میں ٹھہرے ہوئے پانی سے ملا ہے

یہ صبح کی آغوش میں کھلتا ہوا منظر

اک سلسلۂ شب کی گرانی سے ملا ہے

اشفاق حسین

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(387) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ashfaq Hussain, Dil Aik Nayi Dnaye Maani Se Milla Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 74 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ashfaq Hussain.