Jala Kay Daman E Hasti Ka Taar Taar OTha

جلا کے دامن ہستی کا تار تار اٹھا

جلا کے دامن ہستی کا تار تار اٹھا

کبھی جو نالۂ غم دل سے شعلہ بار اٹھا

خیال و فکر و تمنا کا خون چھپ نہ سکا

زباں خموش تھی لیکن لہو پکار اٹھا

فلک پہ جب بھی حقائق کی سرخیاں ابھریں

زمیں سے کہنہ روایات کا غبار اٹھا

رواں دواں ہے رگ سنگ میں لہو کی طرح

وہ زندگی کا تلاطم جو بار بار اٹھا

رہ حیات میں جب ڈگمگائے میرے قدم

مرا ہی نقش کف پا مجھے پکار اٹھا

فریب وعدۂ فردا کا ذکر کیا کیجے

وہ معتبر ہی تھے کب جن کا اعتبار اٹھا

فریدؔ اہل گلستاں بھی ہوش کھو بیٹھے

کچھ اس ادا سے حجاب رخ بہار اٹھا

فرید عشرتی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1064) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fareed Ishrati, Jala Kay Daman E Hasti Ka Taar Taar OTha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 16 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fareed Ishrati.