Pursooz Jigar K Naale Bhi Dil Sozz Nikalte Rehte Hain

پر سوز جگر کے نالے بھی دل سوز نکلتے رہتے ہیں

پر سوز جگر کے نالے بھی دل سوز نکلتے رہتے ہیں

ہاں شمع بھی جلتی رہتی ہے پروانے بھی جلتے رہتے ہیں

خدام حریم ناز جو ہیں اللہ رے ان کی خوش بختی

دیدار بھی ہوتا رہتا ہے ارماں بھی نکلتے رہتے ہیں

غربت میں وطن اور اہل وطن کی یاد جب آ جاتی ہے مجھے

دل ہے کہ تڑپتا رہتا ہے اور اشک بھی ڈھلتے رہتے ہیں

اے شیخ و برہمن دیکھتا ہوں دن رات تمہارے مردوں کو

یہ خاک میں ملتے رہتے ہیں وہ آگ میں جلتے رہتے ہیں

آئینہ حسن صبیح بھی کیا دیکھے کہ وہ وقت نظارہ

دم بھر نہیں جمتے شوق نظر کے پاؤں پھسلتے رہتے ہیں

اے شیخ حرم اعجاز ہے یہ پر کیف نگاہ ساقی کا

باہوش تو گرتے رہتے ہیں بے ہوش سنبھلتے رہتے ہیں

آرام و مصیبت کیا شے ہے ہوتا نہیں کچھ احساس انہیں

منزل کی جو دھن میں ہیں صابرؔ دن رات وہ چلتے رہتے ہیں

فضل حسین صابر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(362) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fazal Husain Sabir, Pursooz Jigar K Naale Bhi Dil Sozz Nikalte Rehte Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fazal Husain Sabir.