Wasl Main Pher K Moun Haye Kissi Ka Kehna

وصل میں پھیر کے منہ ہائے کسی کا کہنا

وصل میں پھیر کے منہ ہائے کسی کا کہنا

ہم نہ مانیں گے نہ مانیں گے کسی کا کہنا

ایک دشمن ہے کہ تم سنتے ہو اس کا کہنا

ایک میں ہوں کبھی ہوتا نہیں میرا کہنا

دل ربا کہتا ہے اے یار دلارا کہنا

ایک تو نام ہیں دو پھر تجھے کیا کیا کہنا

ہم مناتے ہیں تمہیں بہر خدا من جاؤ

مان لو مان لو اے جان ہمارا کہنا

زیب محفل بھی ہو تم زینت گلشن بھی ہو تم

چمن آرا کہ تمہیں انجمن آرا کہنا

ایک ہی وار میں سر تن سے جدا کر ڈالا

واہ اے خنجر سفاک ترا کیا کہنا

دیکھ کر ان کو مرا شوق یہ کہنا ہے مجھے

تجھ کو منظور ہے جو کچھ انہیں کہنا کہنا

مجھ کو اک جام پلا کر یہ کہا ساقی نے

ہو اگر اور ضرورت تو دوبارا کہنا

درد دل درد جگر دیکھتا جا اے ساقی

کیا کہا کیا کہا پھر کہنا دوبارہ کہنا

توبہ کرنے کا کہا میں نے تو ساقی نے کہا

کیا کہا کیا کہا پھر کہنا دوبارہ کہنا

جو برا کہتے ہیں کہنے دو انہیں اے صابرؔ

حق تو یہ ہے کہ مرے حق میں ہے اچھا کہنا

فضل حسین صابر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(568) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fazal Husain Sabir, Wasl Main Pher K Moun Haye Kissi Ka Kehna in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fazal Husain Sabir.