Aik Parwaaz Dikhayi Di Hai

ایک پرواز دکھائی دی ہے

ایک پرواز دکھائی دی ہے

تیری آواز سنائی دی ہے

صرف اک صفحہ پلٹ کر اس نے

ساری باتوں کی صفائی دی ہے

پھر وہیں لوٹ کے جانا ہوگا

یار نے کیسی رہائی دی ہے

جس کی آنکھوں میں کٹی تھیں صدیاں

اس نے صدیوں کی جدائی دی ہے

زندگی پر بھی کوئی زور نہیں

دل نے ہر چیز پرائی دی ہے

آگ میں کیا کیا جلا ہے شب بھر

کتنی خوش رنگ دکھائی دی ہے

گلزار

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(220) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Gulzar, Aik Parwaaz Dikhayi Di Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 59 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Gulzar.