Social Poetry of Gulzar - Social Shayari

گلزار کی معاشرتی شاعری

میں کھنڈروں کی زمیں پہ کب سے بھٹک رہا ہوں

Main Khandaron Ki Zame Pay Kab Se Bhatak Raha Hon

(Gulzar) گلزار

مجھ کو بھی ترکیب سکھا کوئی یار جلاہے

Mujh Ko Bhi Tarkeeb Sikha Koi Yaar Jalahay

(Gulzar) گلزار

میں کھنڈروں کی زمیں پہ کب سے بھٹک رہا ہوں

Main Khandaron Ki Zame Pay Kab Se Bhatak Raha Hon

(Gulzar) گلزار

مجھ کو بھی ترکیب سکھا کوئی یار جلاہے

Mujh Ko Bhi Tarkeeb Sikha Koi Yaar Jalahay

(Gulzar) گلزار

میں کھنڈروں کی زمیں پہ کب سے بھٹک رہا ہوں

Main Khandaron Ki Zame Pay Kab Se Bhatak Raha Hon

(Gulzar) گلزار

مجھ کو بھی ترکیب سکھا کوئی یار جلاہے

Mujh Ko Bhi Tarkeeb Sikha Koi Yaar Jalahay

(Gulzar) گلزار

میں کھنڈروں کی زمیں پہ کب سے بھٹک رہا ہوں

Main Khandaron Ki Zame Pay Kab Se Bhatak Raha Hon

(Gulzar) گلزار

مجھ کو بھی ترکیب سکھا کوئی یار جلاہے

Mujh Ko Bhi Tarkeeb Sikha Koi Yaar Jalahay

(Gulzar) گلزار

جی میں آتا ہے کہ اس کان سے سوراخ کروں

Jee Main Aata Hai Ke Is Kaan Se Sorakh Karoon

(Gulzar) گلزار

میرے کپڑوں میں ٹنگا ہے

Mere Kapron Main Tanga Hai

(Gulzar) گلزار

دور سنسان سے ساحل کے قریب

Daur Sunsaan Se Sahil Ke Qareeb

(Gulzar) گلزار

ایک لڑھکی ہوئی وادی میں

Aik Larhaki Howi Waadi Main

(Gulzar) گلزار

منظر! نرسنگ ہوم

Manzar! Nrsng Home

(Gulzar) گلزار

میں کائنات میں

Mein Kayenat Main

(Gulzar) گلزار

ایک لڑھکی ہوئی وادی میں

Aik Larhaki Howi Waadi Main

(Gulzar) گلزار

منظر! نرسنگ ہوم

Manzar! Nrsng Home

(Gulzar) گلزار

میں کائنات میں

Mein Kayenat Main

(Gulzar) گلزار

بستہ پھینک کے لو جی بھاگا روشن آرا باغ کی جانب

Basta Pheink Ke Lo Jee Bhaga Roshan Aara Baagh Ki Janib

(Gulzar) گلزار

نظم الجھی ہوئی ہے سینے میں

Nazam Uljhi Howi Hai Senay Main

(Gulzar) گلزار

اپنی مرضی سے تو مذہب بھی نہیں اس نے چنا تھا

Apni Marzi Say To Mazhab Bhi Nahi Is Ne Chona Tha

(Gulzar) گلزار

بستہ پھینک کے لو جی بھاگا روشن آرا باغ کی جانب

Basta Pheink Ke Lo Jee Bhaga Roshan Aara Baagh Ki Janib

(Gulzar) گلزار

نظم الجھی ہوئی ہے سینے میں

Nazam Uljhi Howi Hai Senay Main

(Gulzar) گلزار

اپنی مرضی سے تو مذہب بھی نہیں اس نے چنا تھا

Apni Marzi Say To Mazhab Bhi Nahi Is Ne Chona Tha

(Gulzar) گلزار

وقت کی آنکھ پہ پٹی باندھ کے کھیل رہے تھے آنکھ مچولی

Waqt Ki Aankh Pay Pati Bandh Ke Khail Rahay Thay Ankh Macholi

(Gulzar) گلزار

Records 1 To 24 (Total 91 Records)

Social Shayari of Gulzar - Poetry of Social. Read the best collection of Social poetry by Gulzar, Read the famous Social poetry, and Social Shayari by the poet. Social Nazam and Social Ghazals of the poet. The best collection of Shayari by Gulzar online. You can also read different types of poetries by the poet including Social Shayari from different books of the poet.