Mohabbat Ibteda Main Hai Jafain Namunashib Hain

محبت ابتدا میں ہے جفائیں نا مناسب ہیں

محبت ابتدا میں ہے جفائیں نا مناسب ہیں

تمہارے روٹھنے کی یہ ادائیں نا مناسب ہیں

یہ شاید عمر ایسی تھی محبت ہو گئی مجھ کو

مگر اس عمر میں اتنی سزائیں نا مناسب ہیں

تمہارے شہر سے جانا مقدر تھا سو جھیلا ہے

مگر اس میں رقیبوں کی دعائیں نا مناسب ہیں

ابھی سے ہجر کی تلخی میں مر جاؤں گا جان جاں

ابھی موسم وفا کا ہے جفائیں نا مناسب ہیں

انہی تاریکیوں میں زندہ رہنے کا ہنر سیکھو

دیے کو مت جلاؤ تم ہوائیں نا مناسب ہیں

یہ شعر و شاعری دائمؔ یہ عشق و عاشقی دائمؔ

مری مانو تمہاری یہ ادائیں نا مناسب ہیں

حمزہ دائم

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(383) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Hamza Daim, Mohabbat Ibteda Main Hai Jafain Namunashib Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Hamza Daim.