Na Sunti Hai Na Kehna Chahti Hai

نہ سنتی ہے نہ کہنا چاہتی ہے

نہ سنتی ہے نہ کہنا چاہتی ہے

ہوا اک راز رہنا چاہتی ہے

نہ جانے کیا سمائی ہے کہ اب کی

ندی ہر سمت بہنا چاہتی ہے

سلگتی راہ بھی وحشت نے چن لی

سفر بھی پا برہنہ چاہتی ہے

تعلق کی عجب دیوانگی ہے

اب اس کے دکھ بھی سہنا چاہتی ہے

اجالے کی دعاؤں کی چمک بھی

چراغ شب میں رہنا چاہتی ہے

بھنور میں آندھیوں میں بادباں میں

ہوا مصروف رہنا چاہتی ہے

منظور ہاشمی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(625) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Manzoor Hashmi, Na Sunti Hai Na Kehna Chahti Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 18 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Manzoor Hashmi.