Dukhoon Ke Dasht Gamoon Ke Nagar Main Chore Aaye

دکھوں کے دشت غموں کے نگر میں چھوڑ آئے

دکھوں کے دشت غموں کے نگر میں چھوڑ آئے

وہ ہم سفر کہ جنہیں ہم سفر میں چھوڑ آئے

بہت جمیل سی یادوں کو ساتھ لے آئے

بہت ملول سے چہروں کو گھر میں چھوڑ آئے

بڑے قرینے سے ہم آ گئے کنارے پر

بڑے سلیقے سے کشتی بھنور میں چھوڑ آئے

کس اہتمام سے اب تک پکارتی ہیں ہمیں

وہ چاہتیں جنہیں دیوار و در میں چھوڑ آئے

بہت عجیب تھے وہ لوگ جو دم رخصت

کئی کہانیاں اس چشم تر میں چھوڑ آئے

نہ دن ہی پھرتے ہیں محسنؔ نہ شب بدلتی ہے

وطن کو کون سے شام و سحر میں چھوڑ آئے

محسن احسان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(319) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Mohsin Ehsan, Dukhoon Ke Dasht Gamoon Ke Nagar Main Chore Aaye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 35 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Mohsin Ehsan.