Nawah Wusat Maidan Main Herani Bohat Hai

نواح وسعت میداں میں حیرانی بہت ہے

نواح وسعت میداں میں حیرانی بہت ہے

دلوں میں اس خرابی سے پریشانی بہت ہے

کہاں سے ہے کہاں تک ہے خبر اس کی نہیں ملتی

یہ دنیا اپنے پھیلاؤ میں انجانی بہت ہے

بڑی مشکل سے یہ جانا کہ ہجر یار میں رہنا

بہت مشکل ہے پر آخر میں آسانی بہت ہے

بسر جتنی ہوئی بے کار و بے منزل زمانے میں

مجھے اس زندگانی پر پشیمانی بہت ہے

نکل آتے ہیں رستے خود بہ خود جب کچھ نہ ہوتا ہو

کہ مشکل میں ہمیں خوابوں کی ارزانی بہت ہے

بہت رونق ہے بازاروں میں گلیوں اور محلوں میں

پر اس رونق سے شہر دل میں ویرانی بہت ہے

منیر نیازی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1080) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Munir Niazi, Nawah Wusat Maidan Main Herani Bohat Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 130 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Munir Niazi.