Asma Sooraj Setaray Behar O Bar Kis Ke Liye

آسماں سورج ستارے بحر و بر کس کے لیے

آسماں سورج ستارے بحر و بر کس کے لیے

یہ سفر کس کے لئے رخت سفر کس کے لئے

وہ ہرے دن وہ بھرے موسم تو کب کے جا چکے

ہاتھ پھیلائے کھڑے ہیں اب شجر کس کے لئے

دن نکلتے ہی نکل آئے تھے کس کی کھوج میں

شام ڈھلتے ہی چلے آئے ہیں گھر کس کے لیے

تو کسی کا منتظر کب تھا مگر یہ تو بتا

عمر بھر دل کا کھلا رکھا ہے در کس کے لئے

کون دریاؤں کی ہیبت اوڑھ کر نکلا نجیبؔ

چیخ اٹھے ہیں سمندر میں بھنور کس کے لئے

نجیب احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(643) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Najeeb Ahmed, Asma Sooraj Setaray Behar O Bar Kis Ke Liye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Najeeb Ahmed.