Kamal E Zabt Main Yeh Rakh Rakhao Dekha Hai

کمالِ ضبط میں ۔۔۔۔ یہ رکھّ رکّھاؤ دیکھا ہے؟

کمالِ ضبط میں ۔۔۔۔ یہ رکھّ رکّھاؤ دیکھا ہے؟

جو ہم نے سینچا ہے، سرسبزگھاؤ دیکھا ہے؟

تھی جس میں لاگ ، تمہارا لگاؤ دیکھا ہے

وہ جس کو پیارسمجھتے ہو، جاؤ دیکھا ہے

جلا کے راکھ کرے گا یہ سرد مہری تری

مرے وجود میں ۔۔۔۔۔۔۔ جلتا الاؤ دیکھا ہے؟

ہے دیکھا روپ مرا تم نے بپھرے دریا سا ؟

ابھی تو ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ نرم ندی سا بہاؤ دیکھا ہے

یہ بے نیازی تری خوب ہے، مگر میں نے

جو میری سمت ہے تیرا جھکاؤ ، دیکھا ہے

نہیں ہے ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ جان بچانے کی اب سبیل کوئی

جو ہم نے کھیلا ہے اب کے، وہ داؤ دیکھا ہے؟

دیا ہے مفت ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ لیا ہے تو جان کے بدلے

دلوں کی بات میں ۔۔۔۔۔۔۔۔ کب بھاؤ تاؤ دیکھا ہے

تمہارے دھیان سے سنورے ہیں خد و خالِ سخن

سبھاؤ شعر کا دیکھا ؟ ۔۔۔۔۔۔۔۔۔۔ رچاؤ دیکھا ہے؟

نسرین سید

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(502) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Nasreen Syed, Kamal E Zabt Main Yeh Rakh Rakhao Dekha Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 54 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Nasreen Syed.