Nahi Chairo Tumhare Kaam Ka Yeh Dil Nahi Rakh Do, Urdu Ghazal By Professor Rasheed Hasrat

Nahi Chairo Tumhare Kaam Ka Yeh Dil Nahi Rakh Do is a famous Urdu Ghazal written by a famous poet, Professor Rasheed Hasrat. Nahi Chairo Tumhare Kaam Ka Yeh Dil Nahi Rakh Do comes under the Heart Broken category of Urdu Ghazal. You can read Nahi Chairo Tumhare Kaam Ka Yeh Dil Nahi Rakh Do on this page of UrduPoint.

نہیں چھیڑو تُمہارے کام کا یہ دِل نہِیں رکھ دو

پروفیسر رشید حسرت

نہیں چھیڑو تُمہارے کام کا یہ دِل نہِیں رکھ دو

مذاق ایسا محبت میں رکھا شامِل نہِیں رکھ دو

اگاہی جا رہی بیکار چِیزیں مہنگے داموں پر

ہمارا دِل ہے یہ بجلی کا کوئی بِل نہِیں رکھ دو

یہ اِک مُفلِس کا دِل ہے کوڑیوں کے بھاؤ بِکتا ہے

بہُت اچّھا تُمہارے پیار کے قابِل نہِیں رکھ دو

تُمہیں جِتنا بھی ہم پر بوجھ رکھنا ہے رکھے جاؤ

اِجازت ہے سِتمگر، قوم یہ بِسمل نہِیں رکھ دو

تعلُّق مُدّتوں کا دوستو کیا بُھول بیٹھے ہو

بڑے دِن سے ہمارے بِیچ میں محفِل نہِیں، رکھ دو

نہِیں مانیں گے ہم کیسے کِیا بھائی نے بٹوارہ

ہمارے نام پر اِس میں رکھی جو مِل نہِیں، رکھ دو

کھڑے ہو عاجزی لے کر جو اب تک چاپلُوسوں میں

کِسی صُورت بتِ مغرُور جو مائِل نہِیں، رکھ دو

مُبائل چھوڑ جاؤ، ایک گھنٹے بعد لے جانا

بنانا اِس کا اپنے واسطے مُشکِل نہِیں، رکھ دو

رشِید ایسے سفر کی رائیگانی کا ہے اندیشہ

تُمہارے سامنے جو اب تلک منزِل نہِیں، رکھ دو

پروفیسر رشید حسرت

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1791) ووٹ وصول ہوئے

You can read Nahi Chairo Tumhare Kaam Ka Yeh Dil Nahi Rakh Do written by Professor Rasheed Hasrat at UrduPoint. Nahi Chairo Tumhare Kaam Ka Yeh Dil Nahi Rakh Do is one of the masterpieces written by Professor Rasheed Hasrat. You can also find the complete poetry collection of Professor Rasheed Hasrat by clicking on the button 'Read Complete Poetry Collection of Professor Rasheed Hasrat' above.

Nahi Chairo Tumhare Kaam Ka Yeh Dil Nahi Rakh Do is a widely read Urdu Ghazal. If you like Nahi Chairo Tumhare Kaam Ka Yeh Dil Nahi Rakh Do, you will also like to read other famous Urdu Ghazal.

You can also read Heart Broken Poetry, If you want to read more poems. We hope you will like the vast collection of poetry at UrduPoint; remember to share it with others.