Poetry of Shahida Hassan, Urdu Shayari of Shahida Hassan

شاہدہ حسن کی شاعری

دنیا کی نسل پرست ذہنیتوں کے نام

Dunya Ki Nasal Parast Zehniyatoon K Naam

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

خود آپ اپنے خوں میں نہایا نہ جائے گا

Khud App Apne Khoon Main Nahaya Nahi Jaye Ga

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

سکوں کہیں بھی نہیں ہے،اماں کہیں بھی نہیں

Sakoon Kahin Bhi Nahi Hai Amaan Kahin Bhi Nahi

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

کبھی امید ،کبھی ڈر کی سمت دیکھتی ہوں

Kabhi Umeed Kabhi Dar Ki Simat Dekhti Hoon

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

مکر و ریا کی ساری ادائوں سے لڑ پڑی

Makar O Riya Ki Sari Adaoon Se Lar Pari

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

غُبارِ خاک کی تقدیر،اُس کے ہاتھ میں ہے

Gubar E Khak Ki Taqdeer Uss K Hath Main Hai

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

بچپن میرا جن گلیوں سے شور مچاتا گزرا تھا

Bachpan Mera Jin Galiyon Se Shor Machata Guzra Tha

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

صبح و شام کے ہر لمحے میں اکثر جو بھی کرتی ہوں

Subha O Shaam K Har Lamhe Main Aksar Ju Bhi Karti Hoon

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

سولہ دسمبر انیس سو اکہتر کی یاد میں

16 December 1971 Ki Yaad Main

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

اے سروِ پدر ،اے نخلِ رواں ،مرے پاس رہو

Aee Sar O Piddar Mere Pass Raho

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

تازہ ہوا کا جھونکا آیا ہی چاہتا ہے

Taza Hawa Ka Jhonka Aya Hi Chahta Hai

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

رہے گی رسمِ ستم جو پیہم یہاں،تو کچھ بھی نہیں رہے گا

Rahe Gi Rasm E Sitam Ju Pehaan Yahan Tu Kuch Bhi Nahi Rahe Ga

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

بہت ہی ظلمت ہے

Buhat Hi Zulmat Hai

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

ہمیں کیا اِن زمینی فاصلوں سے

Hamain Kiya In Zameeni Fasloon Se

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

اک نیا یہ تجربہ،کیسا لگا؟

Ik Naya Yeh Tajurba Kaisa Laga

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

جو کنارِ آبِ رواں بسا،مرے شہریار کا شہر ہے

Ju Kinar E Ab E Rawan Basa Mere Sheheryar Ka Sheher Hai

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

صبح ِ آئندگاں ہماری ہے

Subha E Aaindadgaan Hamari Hai

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

باہَر باہَر پھیل گئی ' وہ دھوپ کڑی ' جو اندر تھی

Bahir Bahir Phel Gayi Wo Dhoop Kari Ju Andar Thi

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

بات کوئی ایک پل اس کے دھیان آنے کی تھی

Bat Koi Aik Pal Us Ke Dhiyan Aane Ki Thi

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

وحشتوں کو بھی اب کمال کہاں

Wehshaton Ko Bhi Ab Kamal Kahan

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

لمس آہٹ کے، ہواؤں کے نشاں کچھ بھی نہیں

Lamas Aahat Ke Hawaon Ke Nishaan Kuch Bhi Nahi

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

سبب کیا ہے کبھی سمجھی نہیں میں

Sabab Kia Hai Kabhi Samjhi Nahi Main

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

سارے پتھر اور آئینے ایک سے لگتے ہیں

Sare Pathar Aur Aaine Aik Se Lagte Hain

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

ٹھہرا ہے قریب جان آ کر

Thehda Hai Qareeb Jaan Aakar

(Shahida Hassan) شاہدہ حسن

Records 1 To 24 (Total 28 Records)

Shahida Hassan was born on 24 November 1953 in ChittagongBangladesh. She is a contemporary Urdu poet based in Pakistan. She is known for her poems and ghazals. She has written a lot of Urdu poetry, which has been published in two authorized collections, Yahan Kuch Phool Rakhey hain and Ek Taara hai sarhaaney mere. She received her Master's in English from the University of Karachi.

Urdu Poetry & Shayari of Shahida Hassan. Read Nazams, Ghazals, Qataats, Love Poetry, Sad Poetry, Social Poetry, Friendship Poetry, Bewafa Poetry, Heart Broken Poetry, Hope Poetry of Shahida Hassan, Nazams, Ghazals, Qataats, Love Poetry, Sad Poetry, Social Poetry, Friendship Poetry, Bewafa Poetry, Heart Broken Poetry, Hope Poetry and much more. There are total 28 Urdu Poetry collection of Shahida Hassan published online.