Guftani Ju Nahi Sunaye Hain

گفتنی جو نہیں، سنائے ہیں

گفتنی جو نہیں، سنائے ہیں

جو نہیں دیدنی دکھائے ہیں

اپنی آنکھوں اعتبار نہیں

لوگ کہتے ہیں، آپ آئے ہیں

جس جگہ خار بھی نہیں اگتے

پھول میں نے وہاں، کھلائے ہیں

تیرے چہرے پہ ہے نظر میری

میری پلکوں پہ تیرے سائے ہیں

وہ جو اپنے، نہ تھے ہوئے اپنے

وہ جو اپنے تھے، اب پرائے ہیں

ان گنت، بے شمار، لامحدود

دل نے کتنے فریب کھائے ہیں

جانے کس کا خیال دل میں لئے

تیری محفل میں لوٹ آئے ہیں

عکس کو آئینہ ضروری نہیں

آئینے عکس نے دکھائے ہیں

تم نے دیکھی ہے روح کی پرواز؟

کیا پرندے کبھی اڑائے ہیں؟

ہوگئے راکھ کچھ پسِ گِردوں

کچھ ستارے زمیں پہ آئے ہیں

کوئی تعبیر بھی سحر دیتا

خواب تو نے اگر دکھائے ہیں

شائستہ سحر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1047) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shaista Sehar, Guftani Ju Nahi Sunaye Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Islamic, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 55 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Islamic, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shaista Sehar.