Yun Tu Mumkin Hi Na Tha Uss Se Bichar Kar Jeena

یوں تو ممکن ہی نہ تھا اس سے بچھڑ کر جینا

یوں تو ممکن ہی نہ تھا اس سے بچھڑ کر جینا

کتنا آسان ہوا پھر بھی اجڑ کر جینا

چاہے دنیا کا مرے ہاتھ سے چھوٹے دامن

تو مرا ہاتھ مگر دوست! پکڑ کر جینا

شاخِ سر سبز سے چھن جائے گا، کلیوں کو سرود

راس آئے گا نہیں جڑ کو اکڑ کر جینا

ہم بھی اک شکلِ انا ایسی بنا بیٹھے ہیں

جو یہ کہتی ہے سدا خود سے بگڑ کر جینا

زندگی امن و سکوں سے ہی سحر کرنی ہے

کیا ضروری ہے، ہر اک بات پہ لڑ کر جینا

شائستہ سحر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1089) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shaista Sehar, Yun Tu Mumkin Hi Na Tha Uss Se Bichar Kar Jeena in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 55 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shaista Sehar.