Hawa Aayi Na Endhaan Aa Raha Hai

ہوا آئی نہ ایندھن آ رہا ہے

ہوا آئی نہ ایندھن آ رہا ہے

چراغوں میں نیا پن آ رہا ہے

جمال یار تیرے جھانکنے سے

کنویں سے پانی روشن آ رہا ہے

میں گلیوں میں نکلنا چاہتا ہوں

مرے رستے میں آنگن آ رہا ہے

مجھے شہتوت کی خواہش بہت تھی

مگر مجھ پر تو جامن آ رہا ہے

میاں میں اپنی جانب آ رہا ہوں

خبر کر دو کہ دشمن آ رہا ہے

مجھے خیرات بانٹی جا رہی ہے

مرے ہاتھوں میں برتن آ رہا ہے

گلے میں ہار آنا چاہیے تھا

گلے میں طوق گردن آ رہا ہے

عاطف کمال رانا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(332) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Aatif Kamal Rana, Hawa Aayi Na Endhaan Aa Raha Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 5 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Aatif Kamal Rana.