Hamaray Baray Main Kya Kya Nah Koch Kaha Hoga

ہمارے بارے میں کیا کیا نہ کچھ کہا ہوگا

ہمارے بارے میں کیا کیا نہ کچھ کہا ہوگا

چلیں گے ساتھ تو دنیا کا سامنا ہوگا

وہ ایک شخص جو پتھر اٹھا کے دوڑا تھا

ضرور خواب کی کڑیاں ملا رہا ہوگا

ہمارے بعد اک ایسا بھی دور آئے گا

وہ اجنبی ہی رہے گا جو تیسرا ہوگا

خزاں پسند ہمیں ڈھونڈنے کو نکلے ہیں

ہمارے درد کا قصہ کہیں سنا ہوگا

جو ہر قدم پہ مرے ساتھ ساتھ رہتا تھا

ضرور کوئی نہ کوئی تو واسطا ہوگا

نہیں ہے خوف کوئی رہبروں سے آشفتہؔ

ہمارے ساتھ شکستوں کا قافلا ہوگا

آشفتہ چنگیزی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(552) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ashufta Changezi, Hamaray Baray Main Kya Kya Nah Koch Kaha Hoga in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ashufta Changezi.