Larazte Hath Se Seedha Leehaf Karte Hue

لرزتے ہاتھ سے سیدھا لحاف کرتے ہوئے

لرزتے ہاتھ سے سیدھا لحاف کرتے ہوئے

وہ رو رہا تھا مرے زخم صاف کرتے ہوئے

یہ شہر ابن _ زیاد اور یزید مسلک ہے

یہاں پہ سوچیے گا اعتکاف کرتے ہوئے

چراغ ہم نے چھپائے ہیں کیا تہہ _ دامن

ہوائیں گزری ہیں دل میں شگاف کرتے ہوئے

نہ پوچھ کتنی محبت ہوئی ہے خرچ مری

تمام شہر کو اپنے خلاف کرتے ہوئے

اسی لیے تو مرے جرم ہیں سبھی کو پسند

کہ میں جھجکتا نہیں اعتراف کرتے ہوئے

کسی کے لمس کی سردی اتر گئی ہے آج

دہکتی دھوپ بدن کا غلاف کرتے ہوئے

ہوا میں نوحہ کناں ہیں تھکے پروں کے ساتھ

پرندے جلتے شجر کا طواف کرتے ہوئے

ثواب سارے مرے لے گیا وہ شخص فقیہہ

کسی گناہ پہ مجھ کو معاف کرتے ہوئے

فقیہہ حیدر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(428) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Faqeeh Haidar, Larazte Hath Se Seedha Leehaf Karte Hue in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Friendship, Bewafa, Heart Broken poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Faqeeh Haidar.