Kuch Nahi Grchah Tri Raah Guzar Say Agay, Urdu Ghazal By Farigh Bukhari

Kuch Nahi Grchah Tri Raah Guzar Say Agay is a famous Urdu Ghazal written by a famous poet, Farigh Bukhari. Kuch Nahi Grchah Tri Raah Guzar Say Agay comes under the Social category of Urdu Ghazal. You can read Kuch Nahi Grchah Tri Raah Guzar Say Agay on this page of UrduPoint.

کچھ نہیں گرچہ تری راہ گزر سے آگے

فارغ بخاری

کچھ نہیں گرچہ تری راہ گزر سے آگے

دیکھنا کفر نہیں حد نظر سے آگے

خود فریبی کے لیے گرم سفر ہیں ورنہ

کیا ہے منزل کے سوا گرد سفر سے آگے

میرا افلاک بھی تسکین نظر ہو نہ سکا

تھے وہی شمس و قمر شمس و قمر سے آگے

زندگی وقت کی دیواروں میں محبوس رہی

کوئی پردہ نہ اٹھا شام و سحر سے آگے

آج کے دور کا دعویٰ ہے کہ عنقا کے سوا

کوئی عقدہ نہیں عرفان بشر سے آگے

قطرے قطرے کو ترستے رہے صحرا فارغؔ

جھوم کر اٹھے بھی بادل تو وہ برسے آگے

فارغ بخاری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1567) ووٹ وصول ہوئے

You can read Kuch Nahi Grchah Tri Raah Guzar Say Agay written by Farigh Bukhari at UrduPoint. Kuch Nahi Grchah Tri Raah Guzar Say Agay is one of the masterpieces written by Farigh Bukhari. You can also find the complete poetry collection of Farigh Bukhari by clicking on the button 'Read Complete Poetry Collection of Farigh Bukhari' above.

Kuch Nahi Grchah Tri Raah Guzar Say Agay is a widely read Urdu Ghazal. If you like Kuch Nahi Grchah Tri Raah Guzar Say Agay, you will also like to read other famous Urdu Ghazal.

You can also read Social Poetry, If you want to read more poems. We hope you will like the vast collection of poetry at UrduPoint; remember to share it with others.