Koi Manzar Bhi Suhana Nahi Rehne Dete

کوئی منظر بھی سہانا نہیں رہنے دیتے

کوئی منظر بھی سہانا نہیں رہنے دیتے

آنکھ میں رنگ تماشا نہیں رہنے دیتے

چہچہاتے ہوئے پنچھی کو اڑا دیتے ہیں

کسی سر میں کوئی سودا نہیں رہنے دیتے

روشنی کا کوئی پرچم جو اٹھا کر نکلے

اس طرح دار کو زندہ نہیں رہنے دیتے

کیا زمانہ ہے یہ کیا لوگ ہیں کیا دنیا ہے

جیسا چاہے کوئی ویسا نہیں رہنے دیتے

کیا کہیں دیدہ ورو ہم تو وہ دریا دل ہیں

کبھی ساحل کو بھی پیاسا نہیں رہنے دیتے

رہزنوں کا وہی منشور ہے اب بھی فارغؔ

سر کشیدہ کوئی جادہ نہیں رہنے دیتے

فارغ بخاری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(832) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farigh Bukhari, Koi Manzar Bhi Suhana Nahi Rehne Dete in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 43 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farigh Bukhari.