Nashshay MeiN Jo Hae Kohna SharaboN Se Zeyada

نشے میں جو ہے کہنہ شرابوں سے زیادہ

نشے میں جو ہے کہنہ شرابوں سے زیادہ

اس جسم کی خوشبو ہے گلابوں سے زیادہ

اک قطرۂ شبنم کو ترستے ہیں گلستاں

یہ فصل تو ممسک ہے سرابوں سے زیادہ

پڑھنا ہے تو انسان کو پڑھنے کا ہنر سیکھ

ہر چہرے پہ لکھا ہے کتابوں سے زیادہ

پہنچا ہوں وہیں پر کہ چلا تھا میں جہاں سے

ہستی کا سفر بھی نہیں خوابوں سے زیادہ

یہ بکھری ہوئی زندگی یکجا نہیں ہوتی

کم ہونے پہ بھی ہم ہیں خرابوں سے زیادہ

فارغؔ کبھی گھٹتی ہی نہیں درد کی دولت

ہوتی ہے ہمیشہ یہ حسابوں سے زیادہ

فارغ بخاری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(672) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farigh Bukhari, Nashshay MeiN Jo Hae Kohna SharaboN Se Zeyada in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Social Urdu Poetry. Also there are 43 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farigh Bukhari.