Button

بٹن

اثر انوکھا ہوا

جب آستیں کا بٹن گر کے کھو گیا جاناں

تمہاری یاد کا سینہ ہزار چاک ہوا

وہ ایک نور کا دھاگہ دھیان میں آیا

کسا ہوا سا کوئی تار ساز کا جیسے

لگا کے پیچ کئی دل کو باندھنے کی ادا

گلابی ہونٹوں سے ہو کر گزرنے والی ڈور

تمہارے دانتوں سے کیا پٹ سے ٹوٹ جاتی تھی

کشادہ آنکھوں کے گوشوں سے سر ابلتے تھے

اب ایسے بانسری پہ کوئی لب نہیں رکھتا

تمہاری طرح بٹن اور کون ٹانکے گا

بس ایک سانس کی سوئی ہے زخم سیتی ہے

ف س اعجاز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(646) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fay Seen Ejaz, Button in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 24 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fay Seen Ejaz.