TukRa JahaN Gira Jigar Chaak Chaak Ka

ٹکڑا جہاں گرا جگر چاک چاک کا

ٹکڑا جہاں گرا جگر چاک چاک کا

یاقوت سا دمکنے لگا رنگ خاک کا

لے جاتے ہیں اٹھا کے ملک اس کی نعش کو

یہ مرتبہ ہے تیغ نگہ کے ہلاک کا

اے باغباں نہ مجھ سے ہو آزردہ میں چلا

اک دم خوش آ گیا تھا مجھے سایہ تاک کا

ملنے میں کتنے گرم ہیں یہ ہائے دیکھیو

کشتہ ہوں میں تو شعلہ رخوں کے تپاک کا

اے شعلہ اپنی گرم روی پر نہ بھولیو

عالم ہے اور آہ دل سوزناک کا

آتا ہے اپنے کشتے کی تربت پہ جب وہ شوخ

اک نعرہ واں سے نکلے ہے روحی فداک کا

شکر خدا کہ نام ہے عصمت کا مصحفیؔ

روز جزا گواہ مرے عشق پاک کا

غلام ہمدانی مصحفی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(865) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ghulam Hamdani Mushafi, TukRa JahaN Gira Jigar Chaak Chaak Ka in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 51 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ghulam Hamdani Mushafi.