Dil Walo Kyun Dil Si Doulat Yun Bekar Lutatay Ho

دل والو کیوں دل سی دولت یوں بیکار لٹاتے ہو

دل والو کیوں دل سی دولت یوں بیکار لٹاتے ہو

کیوں اس اندھیاری بستی میں پیار کی جوت جگاتے ہو

تم ایسا نادان جہاں میں کوئی نہیں ہے کوئی نہیں

پھر ان گلیوں میں جاتے ہو پگ پگ ٹھوکر کھاتے ہو

سندر کلیو کومل پھولو یہ تو بتاؤ یہ تو کہو

آخر تم میں کیا جادو ہے کیوں من میں بس جاتے ہو

یہ موسم رم جھم کا موسم یہ برکھا یہ مست فضا

ایسے میں آؤ تو جانیں ایسے میں کب آتے ہو

ہم سے روٹھ کے جانے والو اتنا بھید بتا جاؤ

کیوں نت راتو کو سپنوں میں آتے ہو من جاتے ہو

چاند ستاروں کے جھرمٹ میں پھولوں کی مسکاہٹ میں

تم چھپ چھپ کر ہنستے ہو تم روپ کا مان بڑھاتے ہو

چلتے پھرتے روشن رستے تاریکی میں ڈوب گئے

سو جاؤ اب جالبؔ تم بھی کیوں آنکھیں سلگاتے ہو

حبیب جالب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(730) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Habib Jalib, Dil Walo Kyun Dil Si Doulat Yun Bekar Lutatay Ho in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Habib Jalib.