Rasta Bhi Tri Simt Tha Ghar Teri Taraf Tha

رستہ بھی تری سمت تھا گھر تیری طرف تھا

رستہ بھی تری سمت تھا گھر تیری طرف تھا

اب جا کے کھلا میرا سفر تیری طرف تھا

آنگن تھا مرا اور نہ در و بام تھے میرے

میں دھوپ میں تھا سایۂ در تیری طرف تھا

محفل تجھے بس چھوڑ کے جانے کے لیے تھی

اک میں ہی فقط خاک بسر تیری طرف تھا

عجلت میں نہ کر ترک تعلق کی شکایت

دل تیری طرف یاد تو کر تیری طرف تھا

آئینے میں اور آب رواں میں تھا ترا عکس

شاید کہ مرا دیدۂ تر تیری طرف تھا

تو موسم گل میں بھی گریزاں رہا مجھ سے

میں شاخ بریدہ تھا مگر تیری طرف تھا

میں تیرے حوالے سے رہا شہر میں معتوب

جو میرا ہنر تھا وہ ہنر تیری طرف تھا

خواجہ رضی حیدر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1021) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Khwaja Razi Haider, Rasta Bhi Tri Simt Tha Ghar Teri Taraf Tha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 15 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Khwaja Razi Haider.