Gar Chand Lafz Haq Main Mere Yaar Bolte

گر چند لفظ حق میں مرے یار بولتے

گر چند لفظ حق میں مرے یار بولتے

جرات کہاں تھی پھر مرے اغیار بولتے

چیخ و پکار کرنی تھی رکھتے اگر زباں

چپ چاپ سامنے کھڑے اشجار بولتے

لقمہ تمارے پیٹ میں ہوتا حلال کا

دعوے سے کہہ رہا ہوں کہ افکار بولتے

مانا کے لب کشائی بھی ممکن نہ تھی وہاں

چل سامنے نہیں پسِ دیوار بولتے

مجھ کو خبر تھی حق کا زمانہ نہیں رہا

رہزن سے قبل اس کے طرفدار بولتے

فاقہ کشی کے ہاتھوں سخن دان مر گیا

ہوتا پسر رئیس کا.......... اخبار بولتے

مت بھیک مانگ زندگی کی اور نہ سرجھکا

ہوتی حُسَینی فکر سرِ دار بولتے

بے ربط اس ہجوم سے ماجد رہا گلہ

اپنے حقوق کے لیے بیمار بولتے

ماجد جہانگیر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(373) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Majid Jahangir, Gar Chand Lafz Haq Main Mere Yaar Bolte in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 54 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Majid Jahangir.