Yeh Raat Tumhari Hai Chamaktey Raho Taroo

یہ رات تمہاری ہے چمکتے رہو تارو

یہ رات تمہاری ہے چمکتے رہو تارو

وہ آئیں نہ آئیں مگر امید نہ ہارو

شاید کسی منزل سے کوئی قافلہ آئے

آشفتہ سرو صبح تلک یوں ہی پکارو

دن بھر تو چلے اب ذرا دم لے کے چلیں گے

اے ہم سفرو آج یہیں رات گزارو

یہ عالم وحشت ہے تو کچھ ہو ہی رہے گا

منزل نہ سہی سر کسی دیوار سے مارو

اوجھل ہوئے جاتے ہیں نگاہوں سے دو عالم

تم آج کہاں ہو غم فرقت کے سہارو

کھویا ہے اسے جس کا بدل کوئی نہیں ہے

یہ بات مگر کون سنے لاکھ پکارو

ناصر کاظمی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1468) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Nasir Kazmi, Yeh Raat Tumhari Hai Chamaktey Raho Taroo in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 100 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Nasir Kazmi.