Tum Dil Ki Dil Main Rakho Bataya Nahi Karo

تم دل کی دل میں رکھو بتایا نہیں کرو

تم دل کی دل میں رکھو بتایا نہیں کرو

یوں کہہ کے داستان رلایا نہیں کرو

مجھ سے بچھڑ کے رہتا ہے دل شاد ایک شخص

یہ من گھڑت کہانی سنایا نہیں کرو

آنکھوں کے گرد حلقے پڑے جاگ جاگ کر

نیندوں کو میری ایسے اڑایا نہیں کرو

میری غزل کا طول تمہارے سبب سے ہے

تم سوچ بن کے شعر میں آیا نہیں کرو

تارے شمار کرتی ہوں شب بھر فراق میں

تم دور مجھ سے جاں مری جایا نہیں کرو

مظلوم کی صدا سے نہ آ جائے انقلاب

اتنا زیادہ ظلم بھی ڈھایا نہیں کرو

کوشش کرو سبیلہؔ کے سب تم سے خوش رہیں

ناحق کسی کے دل کو دکھایا نہیں کرو

سبیلہ انعام صدیقی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(514) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sabeela Inam Siddiqui, Tum Dil Ki Dil Main Rakho Bataya Nahi Karo in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 23 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sabeela Inam Siddiqui.