Khulta Hai Yun Hawa Ka Darecha Samjh Liya

کھلتا ہے یوں ہوا کا دریچہ سمجھ لیا

کھلتا ہے یوں ہوا کا دریچہ سمجھ لیا

خود کو شجر پہ آخری پتا سمجھ لیا

بھٹکے ہوئے خیال کی صورت اسے ملے

بھولا ہوا امید کا رستا سمجھ لیا

اک یہ سوال حل نہیں ہوتا وصال میں

کتنا قریب آ گئے کتنا سمجھ لیا

ملتی رہے گی خواب کی سوغات خواب میں

ہوتا رہے گا طے سفر اپنا سمجھ لیا

اٹھنے لگی ہے شام کی دیوار پھر کہیں

گرنے لگا ہے دھوپ کا خیمہ سمجھ لیا

اپنا مرا قدیم مکانوں میں ہے کوئی

ایک اس سبب سے دل کا اجڑنا سمجھ لیا

اس دن سے پانیوں کی طرح بہہ رہے ہیں ہم

جس دن سے پتھروں کا ارادہ سمجھ لیا

سعید احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(581) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Saeed Ahmad, Khulta Hai Yun Hawa Ka Darecha Samjh Liya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Saeed Ahmad.