Main Our To

میں اور تو

اک البیلی پگڈنڈی ہے

افتاں خیزاں گرتی پڑتی ندی کنارے اتری ہے

ندی کنارے باہیں کھولے اک البیلا پیڑ کھڑا ہے

پیڑ نے رستہ روک لیا ہے

پگڈنڈی حیران کھڑی ہے

جسم چرائے آنکھ جھکائے

دائیں بائیں دیکھ رہی ہے

جانے کب سے باہیں کھولے رستہ روکے پیڑ کھڑا ہے

جانے کب سے

جسم چرائے آنکھ جھکائے پگڈنڈی حیران کھڑی ہے

وزیر آغا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(421) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Wazir Agha, Main Our To in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Wazir Agha.