بند کریں
ادب مضامین

مزید عنوان

اردو ادب میں نیا اضافہ

نابینا شخص

ایک راجا جسے کہ پاس بہت عمدہ قسم کے ہیرے تھے ایک دن اسنے اُن ہیروں میں کچھ بہت عمدہ نقلی ہیرے ملادیے اور کہا جو اس میں سے اصلی اور نقلی ہیرے الگ کردے گا تو اصلی ہیرے بھی اسکو انعام میں دے دو گا ۔ بڑے بڑے جوہری ناکام ہوگے وہ اصل اور نقلی کو الگ نہ کرسکے اور ہار مان لی اتنے میں ایک نابینا شخص

"مضمون" میں شائع کیا گیا

دل کی راہ داری

ایک بچہ اپنی ماں سے آپ روتی کیوں ہیں ماں کیونکہ اس کی ضرورت پڑتی ہے بچہ مجھے سمجھ نہیں آئی۔ ماں نے بچے کو سینے سے لگا کر پیار کرتے ہوئے کہاتمہیں سمجھ آئے گی بھی نہیں پھر بچے نے اپنے باپ سے سوال کیاماں بغیر وجہ کیوں روتی ہے باپ نے لاپرواہی سے جواب دیا

"مضمون" میں شائع کیا گیا

میدان محشر میں پناہ

شیخ سعدی رحمتہ اللہ علیہ فرماتے ہیں کہ ایک شخص نے اپنے خواب میں دیکھا کہ روز محشر برپا ہے مخلوق خدا ایک بہت بڑے میدان میں اکٹھی ہے ہر شخص بدحواس ہے ‘ بدحال ہے سورج کی حرارت آگ کی طرح زمین پر برس رہی ہے اور دھوپ کی شدت سے دماغ پگھلتے جا رہے ہیں دور دور تک سایہ ندارد ہے البتہ اس میدان حشر میں ایک شخص سب سے الگ تھلگ اطمینان سے سائے میں بیٹھا ہے ۔

"مضمون" میں شائع کیا گیا

محبت صرف کچھ دینے اور لینے کا نام ہی نہیں

ایک غریب کسان کی شادی نہایت حسین و جمیل عورت سے ہو گئی۔ اُس عورت کے حسن کی سب سے بڑی وجہ لمبے گھنے سیاہ بال تھے ، جن کی فکر صرف اُسے ہی نہیں بلکہ ان دونوں کو رہتی تھی۔ایک دن کسان کی بیوی نے اپنے شوہر سے کہاکل واپسی پر آتے ہوئے راستے میں دکان سے ایک کنگھی تو لیتے آنا کیونکہ بالوں کو لمبے اور گھنے رکھنے کیلئے انہیں بنانا

"مضمون" میں شائع کیا گیا

غیبت سے بہتر

ایک بزرگ اپنے بچپن کا واقعہ بیان کرتے ہوئے فرماتے ہیں کہ میں بچپن میں عبادت گزار اور شب بیدار تھا مجھے ذکر اللہ کابہت شوق تھا اور ایک رات حسب معمول میں اپنے والد صاحب کے ساتھ ساری رات جاگتا رہا اور

"مضمون" میں شائع کیا گیا

بغاوت

ایک دفعہ کا ذکر ہے ایک بیٹے نے اپنے باپ کو قتل کر کے قبیلے کی سرداری حاصل کی تھی اور بیٹھتے ہی اعلان کر دیا تھا کہ جس کسی نے میرے خلاف بغاوت کی اس کو موت کی سزا کا سامنا کرنا پڑے گالیکن اس کے اس اعلان کے باوجود بھی باغی پیدا ہوگیا تھا اور وہ بھی کوئی اور نہیں اس کا اپنااکلوتا اور سگا بیٹا تھاجب اس کو گرفتار کرکے اس کے سامنے پیش کیا گیا تواس نے اپنے بیٹے کو مخاطب کر کے کہا۔

"مضمون" میں شائع کیا گیا

اٹل فیصلہ

کسی زمانے میں ایک بادشاہ تھا جس نے دس جنگلی کتے پالے ہوئے تھے اس کے وزیروں میں سے جب بھی کوئی وزیر غلطی کرتا بادشاہ اسے ان کتوں کے آگے پھنکوا دیتا کتے اس کی بوٹیاں نوچ نوچ کر مار دیتے ۔ایک بار بادشاہ کے ایک خاص وزیر نے بادشاہ کو غلط

"مضمون" میں شائع کیا گیا

بے وقوف

"حکایات" میں شائع کیا گیا

زخم

ایک دفعہ کا ذکر ہے کہ فلوریڈا میں ایک بچہ صبح جاگتے ہی کپڑے ، جوتے اور موزے اتار کر بھاگتا ہوا ندی میں کودا۔ اس کا باپ ایک کسان تھا اور گھر کے باہر کام کر رہا تھا۔ اس نے اپنے بیٹے کو اتنا خوش دیکھا تو کھل اٹھااس کا بیٹا اس بات سے بے خبر تھا کہ

"مضمون" میں شائع کیا گیا

بدقسمتی

ایک 80سالہ اندھا بھکاری حضرت شیخ سعدی شیرازی رحمتہ اللہ علیہ کے دروازے پر دستک دیتے ہوئے کہہ رہا ہوتا ہے کہ کاش مجھے اتنی تکلیف والی زندگی نہ ملتی،آپ رحمتہ اللہ علیہ دستک سن کر دروازے پر آتے ہیں اور اسے کہتے ہیں کہ آئے تو تم بھیک مانگنے ہو لیکن یہ کیا بات کر رہے ہو؟ بھکاری نے جواب دیا کہ میں مانگنے نہیں آیا، میرا ایک سوال ہے اس کا جواب چاہیے۔

"مضمون" میں شائع کیا گیا

دولت

ایک شخص کو سونے کی ایک اینٹ ملی اس اینٹ کے ملنے سے قبل وہ شخص غریب تھا اور نماز روزے کا پابند تھا وہ شخص ہر وقت ذکر الٰہی میں مشغول رہتا تھا اور اپنے ان اشغال میں بڑی حلاوت محسوس کرتا تھا جب اس شخص کو سونے کی اینٹ ملی تو اس کی

"مضمون" میں شائع کیا گیا

مجھ سے بھی زیادہ سخی

ایک آدمی نے حاتم طائی سے پوچھا: اے حاتم کیا سخاوت میں کوئی تجھ سے آگے بڑھا ہے ؟ حاتم نے جواب دیا: ہاں قبیلہ طے کا ایک یتیم بچہ مجھ سے زیادہ سخی نکلا جس کا قصہ کچھ یوں ہے کہ دوران سفر میں شب بسری کے لیئے ان کے گھر گیا، اس کے پاس دس بکریاں تھیں، اس نے ایک ذبح کی، اس کا گوشت تیار کیا اور کھانے کیلئے مجھے پیش کر دیا۔

"مضمون" میں شائع کیا گیا

بیمار بادشاہ اور غریب کمہار

ایک دفعہ ایک ملک کا بادشاہ بیمار ہو گیا، جب بادشاہ نے دیکھا کے اس کے بچنے کی کوئی امید نہیں تو اس نے اپنے ملک کی رعایا میں اعلان کروا دیا کہ وہ اپنی بادشاہت اس کے نام کر دے گا جو اس کے مرنے کے بعد اس کی جگہ ایک رات قبر میں گزارے گا۔

"مضمون" میں شائع کیا گیا

قدرت کا سبق

ایک شخص اپنے دوست کے ساتھ ایک نیم صحرائی علاقے میں گیا اتنے میں آندھی کے آثار ظاہر ہوئے دوست نے بتایا کہ اس علاقے میں بڑی ہولناک قسم کی آندھی آتی ہے وہ اتنی تیز ہوتی ہے کہ بڑی بڑی چیزوں کو اڑا کر لے جاتی ہے اور

"مضمون" میں شائع کیا گیا

جاہل کی علامتیں

شمعون یہودا کا پوتا اور جناب عیسیٰ حواری نے رسول خدا سے کہا : مجھے جاہل کی علامتیں بیان فرما دیں۔

"مضمون" میں شائع کیا گیا

کم قیمت کھلونے

ملک عرب کا ایک بادشاہ بڑھا پے کی عمر کو پہنچ گیا تھا۔ اسی زمانے میں اسے ایک سخت مرض نے آ پکڑا جس کے باعث وہ اپنی زندگی سے مایوس ہو گیا اور یہ تمنا کرنے لگا کہ موت کا فرشتہ جلد آئے اور اسے ان تکلیفوں سے چھڑوا لے ۔ انہی ایام میں میدان جنگ سے ایک سپاہی نے اس کی خدمت میں حاضر ہو کر اسے یہ خوشخبری سنائی کہ حضور کے اقبال کی یاوری سے ہماری فوج نے دشمن کو شکست دے کر فلا علاقے پر قبضہ کر لیا اور اس علاقے کے باشندے سچے دل سے حضور کے فرمانبردار بن گئے ۔

"مضمون" میں شائع کیا گیا

دس ڈالر

کہتے ہیں کہ ایک امریکی ریاست میں ایک بوڑھے شخص کو ایک روٹی چوری کرنے کے الزام میں گرفتار کرنے کے بعد عدالت میں پیش کیا گیا،اس نے بجائے انکار کے اعتراف کیا کہ اُس نے چوری کی ہے اور اُس نے جواب یہ دیا کہ میں بھوکا تھا اور غریب ہو نہیں تو میں مرجاتا۔

"مضمون" میں شائع کیا گیا

دعائے درویش

حضرت سعدی رحمتہ اللہ علیہ فرماتے ہیں کہ زمانے کے نشیب وفراز کامارا ہواایک درویش کسی امیر کے دروازے پر جا کر مددکا طالب ہوا، یہ امیر نہایت بخیل تھا ‘ درویش کی صدا سن کر اسے ذلیل وخوار کرکے نکال دیا اس امیر کے ہمسائے میں ایک غریب نابینا شخص رہا کرتا تھا

"مضمون" میں شائع کیا گیا

ٹیلنٹ

ایک بڑی کمپنی کے گیٹ کے سامنے ایک مشہور سموسے کی دکان تھی۔لنچ ٹائم میں اکثر کمپنی کے ملازم وہاں آکر سموسے کھا یا کرتے تھے ۔ایک دن کمپنی کے ایک منیجر، سموسے کھاتے کھاتے سموسے والے سے مذاق کے موڈ میں آ گیا

"مضمون" میں شائع کیا گیا

کفن چور

بغداد شریف میں ایک پارسا عورت رہتی تھی اسی زمانے میں وہاں ایک کفن چور بھی راہ کرتا تھا۔ جب وہ پارسا عورت اس دنیا سے رخصت ہوئی تو اس کفن چور نے بھی اسکا جنازہ پڑھا تاکہ اس کی قبر دیکھ سکے جب رات ہوئی تو وہ

"مضمون" میں شائع کیا گیا