بند کریں
ادب مضامین

مزید عنوان

اردو ادب میں نیا اضافہ

مکرو فریب کے جال

حضرت حاتم اصم رحمتہ اللہ علیہ اپنے مکان کے جس حصہ میں بیٹھا کرتے تھے وہاں کی چھت پر ایک مکڑی نے جالا بن رکھا تھا

"حکایات" میں شائع کیا گیا

پیٹ کا کھایا کوئی نہیں دیکھتا تَن کا پہنا سب دیکھتے ہیں

اعظم نگر میں جولوگ آباد تھے ان کا شمار نہ ہی بہت امیرلوگوں میں ہوتا تھا اور نہ ہی بہت غریب لوگوں میں

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

روشن چراغ

فضلو دونوں ٹانگوں سے معذور تھا جس کی وجہ سے وہ زمین پر گھسیٹ گھسیٹ کر چلتا تھا

"افسانہ" میں شائع کیا گیا

بلا عنوان

جب مائیں بچوں کو صداﺅں میں رکھنا چھوڑ دیں تو بچے گم ہو جایا کرتے ہیں اور جب راستے ہی سفر چھپانا شروع کر دیں تو قدموں کے کارواں بے توقیر ہو جایا کرتے ہیں

"افسانہ" میں شائع کیا گیا

امیلیڈا کے دیس میں قسط 8 ۔۔۔۔ صلیبوں پر جے سالک

سارا دن سڑک پیمائی کے بعد شام سے پہلے لوٹ آیا تو ملک کی آواز کے ساتھ ایک مترنم آواز سنائی دی، کانڈا کو ملک کے ساتھ دیکھ کر اندازہ ہو گیا ملک کا دن کیسے گزرا ہو گا

"سفر نامہ" میں شائع کیا گیا

چاندنی

کریم بخش اپنے گھر کے صحن میں بے قراری سے ٹہل رہا تھا۔ پریشانی کے عالم میں بار بار اس کے ماتھے پر پسینہ آجاتا جسے وہ اپنے ہاتھوں سے پونچھ لیتا

"افسانہ" میں شائع کیا گیا

تیسری رات

اس میں سے دھواں سا نکلتا نظر آیا جو آسمان کی طرف اٹھتا اور زمین پر چلتا جاتا تھا

"الف لیلہ و لیلہ" میں شائع کیا گیا

بدنصیب بادشاہ

شاہ طغرنے اس کو کانپتے دیکھا تو اس پر ترس آگیا اور اس کے پاس رک کر اس سے کہا کہ تم گھبراؤ مت

"حکایات" میں شائع کیا گیا

جیسا دیس ویسا بھیس:

کامران کا آٹھویں جماعت کا نتیجہ نکلا تو وہ اول نمبر سے پاس ہوا۔ اس نے اپنے ابو سے فرمائش کی

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

بے رخی

بوٹا رام پور کا مشہور ڈولچی تھا جسے چوہدری ولی محمد کے ڈیرے میں نوکری کرتے ہوئے تقریباََ دس سال ہوگئے تھے

"افسانہ" میں شائع کیا گیا

طوطے کی طرح آنکھیں پھیرنا

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

اہل کو تلاش کرو

حضرت شیخ سعدی رحمتہ اللہ علیہ بیان کرتے ہیں کہ ایک بادشاہ اپنے لشکر کے ہمراہ سفر میں تھا۔ ایک رات جب اس لشکر نے پڑاؤ کی

"حکایات" میں شائع کیا گیا

اماں امیراں

اماں امیراں نے بیگم صاحبہ کے آگے دوسوروپے مانگنے کے لیے ہاتھ پھیلایا تو بیگم صاحبہ غصے سے پھٹ پڑی

"افسانہ" میں شائع کیا گیا

دوسری رات

چرواہے کی لڑکی نے میری چچیری بہن کو جادو کے زور سے اس ہرنی کی شکل میں تبدیل کر دیا اور مجھ سے کہنے لگی کہ یہی اچھی صورت ہے‘ بری ہوتی تو آنکھوں کو تکلیف پہنچتی

"الف لیلہ و لیلہ" میں شائع کیا گیا

خوبصورت فاتح

سیانے وہ ہوتے ہیں جن کی پہلی اور آخری ترجیح رب ہوتا ہے، وہ پرانی اور شکستہ قبروں کی پکار بھی سن لیتا ہے۔

"افسانہ" میں شائع کیا گیا

امیلیڈا کے دیس میں قسط 7 ۔۔۔ یونیورسٹی آف نو لائف میں

شہر کے مرکز میں سبزے میں گھری دو تین منزلہ وسیع و عریض روشن عمارت جس میں آگے بڑھتے ہر قدم کے ساتھ بڑھتی ویرانی دیکھ کر یہ احساس ہونے لگا کہ اس کا نام کچھ ادھورا سا ہے، مکمل نام یونیورسٹی آف نو لائف ہونا چاہئے تھا

"سفر نامہ" میں شائع کیا گیا

پہلی رات

اگر زمانہ ہم کو ادھر ادھر پھینکتا اور اپنی بدذاتی سے ہمیں نقصان پہنچاتا رہتا ہے تو معلوم ہونا چاہیے کہ آسمان پہ بے گنتی ستارے ہیں مگر گرہن چاند اور سورج ہی کو لگتا ہے۔

"الف لیلہ و لیلہ" میں شائع کیا گیا

پانچوں انگلیاں گھی میں

چاچا کریم نے اپنی زندگی کا ایک بڑا حصہ غربت میں گزارا تھا۔ چاچا کریم موٹر گاڑیوں کا بہترین مکینک تھا۔ اس کے دو بیٹے تھے

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

دنیا سے بے رغبتی

حضرت شیخ سعدی رحمتہ اللہ علیہ بیان کرتے ہیں کہ ایک جنگل میں ایک فقیر اکیلا رہتا تھا۔ ایک دن بادشاہ کا گزر اس جگہ سے ہوا

"حکایات" میں شائع کیا گیا

چوروں کو پڑگئے مور

شاہد بڑی خوشی خوشی تیار ہورہا تھا ۔ وہ آج اپنے ابو کے ساتھ لاہور جارہا تھا۔ لاہور میں شاہد کی خالہ رہتی تھی۔ شاہد کی خوشی کی وجہ یہ تھی کہ وہ لاہور پہلی بار جارہا تھا

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا