بند کریں
ادب مضامین

مزید عنوان

اردو ادب میں نیا اضافہ

حرص کے پھندے میں پھنسے کاحال

مفلس نے جب اس کی زبانی سنا تو کمر کس کے لنگر خانے پہنچ گیا اور دیکھا کہ وہاں واقعی لنگر تقسیم ہورہا تھا

"حکایات" میں شائع کیا گیا

دال میں کچھ کالا ہے

ندیم اس شخص کے پاس جاکر پوچھنے لگا۔ ”بیٹا میں تمہارے ابو کا دوست ہوں

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

ایک شاعر کی سیاسی یادیں ۔۔۔۔۔ پرائمری سکول میں

دو ٹرنکوں، ایک نواڑی پلنگ اور بان کی ایک چارپائی سمیت ہمارا سارا سامان دو تانگوں میں آ گیا

"آپ بیتی" میں شائع کیا گیا

نویں رات

لڑکی دروازے کے پاس ٹھہر گئی اور نقاب الٹ کر آہستہ آہستہ سے دستک دی۔ حمال اس کے پیچھے کھڑا ہوا اس کے حسن و جمال میں محو تھا

"الف لیلہ و لیلہ" میں شائع کیا گیا

حیاتِ جادواں

اے سخی! میں نے ایک شخص سے قرض لیا لیکن وقت پر اسے قرض لاٹانہ سکا اب وہ مجھے کرنے پر آمادہ ہے

"حکایات" میں شائع کیا گیا

آنکھ اوُجھل پہاڑ اُوجھلب

بڑی مشکل سے خیرو کوریل گاڑی کی سیٹ مل پائی وہ دھنس دھنسا کر سیٹ بیٹھ ہی گیا

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

آٹھویں رات

پانی اس نے اپنے شوہر پر چھڑکا اور کہنے لگی اگر تو میرے جادو اور فریب سے ایسا ہوا ہے تو اپنی اصلی صورت اختیار کر لے۔ اس نے یہ کہا ہی تھا کہ جوان کو حرکت ہوئی اور وہ اپنے پاﺅں پر کھڑا ہو گیا

"الف لیلہ و لیلہ" میں شائع کیا گیا

طاق پر بیٹھاالّو بھر بھر مانگے چُلّو

رئیس کو چونکہ شروع ہی سے تعلیم سے دل چسپی نہیں تھی

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

حکومت کرنے کے سنہری اصول

بادشاہ سمجھا کہ شاید یہ میرا کوئی دشمن ہے جو مجھے تنہا دیکھ کر میری جانب بڑھا ہے

"حکایات" میں شائع کیا گیا

حلوائی کی دکان اور دادا جی کی فاتحہ

شرافت اپنے گھر اکثر قرآن خوانی بھی کراتا مگر وہ بچوں میں شیرنی تقسیم کرتا

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

تیرا مر جانا ہی بہتر ہے

حجاج بن یوسف نے ان درویش سے کہا کہ میرے حق میں دعا کریں۔ اس درویش نے دعا کے لئے ہاتھ اٹھائے اور کہا:اے اللہ!حجاج کو موت دے دے

"حکایات" میں شائع کیا گیا

دیے سے روشنی

میرا باپ کہتا تھا نصف شب جب نئے سال کا آغاز ہو، دیے بجھا کر جو بھی دعا مانگیں قبول ہوتی ہے لیکن شرط یہ ہے دعا سے پہلے مخالفین اور دشمنوں کو دل سے معاف کر دیا جائے

"افسانہ" میں شائع کیا گیا

اللہ عزوجل شکستہ دل والوں کے ساتھ ہے

ایک رات حسب معمول میں اپنے والد صاحب کیساتھ ساری رات جاگتا رہا

"حکایات" میں شائع کیا گیا

سوسنار کی ایک لوہار کی

لومڑی اکثر ہرن کے گھر آتی اور ہرن کو لڑ جھگڑ کر یا کسی اور بہانے سے اس کے ہی گھر سے بھگا دیتی اور خود مزے سے ہرن کے گھر سوجاتی

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

رہیں جھونپڑوں میں خواب دیکھیں محلوں کا

” بابا میں چھوٹے موٹے کام نہیں کروں گا، میں تو بڑا آدمی بننا چاہتا ہوں“ خرم نے جواب دیا

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

علیحدگی اختیار کرنا مناسب نا ہوگا

ان مرد بزرگ نے اس دلہن کی بات سن کر فرمایا کہ اے خاتون! اگر تیرا شوہر حسین ہے یا اس کی ذات میں اور کوئی خوبی موجود ہے

"حکایات" میں شائع کیا گیا

جہاں گنج وہاں رنج

ایک دن سیٹھ ہاشم کی ملاقات اپنے بچپن کے ایک دوست سے ہوئی جس کا نام تھا قاسم۔

"کہاوتیں" میں شائع کیا گیا

برے اعمال کا نتیجہ

وہ امیر شخص مال ودولت تو رکھتا تھا مگر اخلاق جیسی نعمت سے بہرہ ور تھا

"حکایات" میں شائع کیا گیا

ساتویں رات

بادشاہ جب قریب پہنچا تو کیا دیکھتا ہے کہ وہ ایک محل ہے جو کالے پتھر کا بنا ہوا ہے اور اس پر لوہے کے پتر جڑے ہیں اور دروازے کا ایک پٹ کھلا ہوا ہے اور دوسرا بند

"الف لیلہ و لیلہ" میں شائع کیا گیا

شبو

ایک بہت بڑی عمارت بن رہی تھی وہاں روڑی کوٹتے ہوئے کبھی سیمنٹ کا گاڑا اٹھاتے ہوئے نظر آتی ساتھ اس کے ایک ساتھ آٹھ سال کے لگ بھگ بچہ تھا

"افسانہ" میں شائع کیا گیا