بند کریں
ادب مضامین

مزید عنوان

اردو ادب میں نیا اضافہ

اللہ عزوجل کا خصوصی کرم

حضرت شیخ سعدی رحمتہ اللہ علیہ بیان کرتے ہیں کہ ایک فقیہہ کا گزر بازار سے ہوا اس نے ایک شرابی جوان کر دیکھا جو زمین پر نہایت بری حالت میں پڑاتھا۔فقیہہ نے نخوت سے اس شرابی کو دیکھا اور منہ پھیر لیا۔شرابی اگرچہ مکمل ہوش میں نہ تھا لیکن اس نے محسوس کیا اس نے مجھے قابل نفرت سمجھا ہے اسلئے منہ پھیر لیا ہے۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

فنا کے بعد بقا ہے

مرشد کامل کے پاک حوض سے نفس کو پاک کرو۔حق کی راہ میں جان بھی جائے تب بھی آگے بڑھو۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

شیخ کا اتصال بحر حقیقت سے ہے یا نہیں

پانی کا دوسری چیزوں کو پاک کرنا اور پھر خود پاک ہوجانا نور الہٰی کے سبب ہے۔اسی طرح انسان کے قول وفعل اس کے باطن کے حال کے گواہ ہوتے ہیں۔طبیب مریض کے اندر کی حالت نہیں دیکھ سکتا تو قارورہ کے ذریعے معلوم کرلیتا ہے۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

بادشاہ۔۔ غریب آدمی اور اس کا خوبصورت گھوڑا

ایک بادشاہ کے عہد میں ایک غریب آدمی تھا۔گاؤں کا رہنے والا۔بہت ہی غریب آدمی تھا،لیکن تھا وہ صوفی آدمی۔روحانیت سے اس کا گہرا تعلق تھاتو اس غریب آدمی کے پاس ایک خوب صورت گھوڑا تھا،اعلیٰ درجے کا گھوڑا۔

"مضمون" میں شائع کیا گیا

رعایا بادشاہ کے لئے پھل دار درخت کی مانند ہے

حضرت شیخ سعدی رحمتہ اللہ علیہ ایک بادشاہ کا قصہ بیان کرتے ہیں کہ وہ معمولی کپڑے کی قبازیب تن کرتا تھا۔ایک دن اس کے ایک درباری نے کہا کہ حضور! آپ خزانوں کے مالک ہیں اور اتنی معمولی قبازیب تن کرتے ہیں۔آپ کے لئے بہتر یہی ہے کہ آپ اپنے لئے بہترین چینی ریشم کی قبا تیار کروائیں اور اسے زیب تن کریں۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

وحدتِ وجود کا مشاہدہ کرو

موجودِ حقیقی وہی ہے

"حکایات" میں شائع کیا گیا

سوالی کا صابر و شاکر ہونا ضروری ہے

حضرت شیخ سعدی رحمتہ اللہ علیہ بیان کرتے ہیں کہ ایک بوڑھا شخص صبح کے وقت بھیک مانگنے نکلا اور ایک مسجد کا کھلا دروازہ دیکھ کر اس نے صدالگانی شروع کردی ہے کوئی جو اس بوڑھے کو خیرات دے؟

"حکایات" میں شائع کیا گیا

فحش گوئی نہایت مکروہ فعل ہے

حضرت شیخ سعدی رحمتہ اللہ علیہ بیان کرتے ہیں کہ ایک نیک اور متقی شخص جب بھی گفتگو ہوتی اپنے دشمنوں کا ذکر بھی اچھے الفاظ میں کرتا تھا۔جب بھی اس کے کسی دشمن کے متعلق کوئی گفتگو ہوتی تو وہ ان کا ذکراچھے الفاظ میں کیا کرتا۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

”بہروپ“

دو صوفی تھے ایک بڑا صوفی ٹرینڈ اور ایک چھوٹا صوفی انڈر ٹریننگ۔چھوٹے صوفی کو ساتھ لے کر بڑا صوفی گلیوں،بازاروں میں گھومتا رہا۔چلتے چلاتے اس کو لے کر ایک جنگل میں چلا گیا

"مضمون" میں شائع کیا گیا

نورِ باطن رکھنے والا عارف ہے

دوستی کی شناخت دوست کے ہاتھوں پر مصیبت و آفت پر خوش آنا ہے۔خواہش نفسانی سے آزادی پانے والا ہی حقیقی آزاد ہے۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

باطنی ادب ضروری ہے

شیخ طریقت دلوں کے حال سے واقف ہوتا ہے اس لئے باطنی ادب ضروری ہے۔عالم غیب کی خوشبو اس جہان میں ڈھونڈو اور نورِ بصیرت تلاش کرو۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

شیخ ابو طاہر حراتی رحمتہ اللہ علیہ

حضرت شیخ ابوطاہر حراتی رحمتہ اللہ علیہ ایک دن گدھے پر سوار بازار سے گزر رہے تھے ایک مرید لگام تھامے ہوئے ساتھ تھا کسی نے پکارا دیکھو یہ پیر زندیق آرہا ہے

"مضمون" میں شائع کیا گیا

حاسد کا ٹھکانہ دوزخ ہے

حضرت شیخ سعدی رحمتہ اللہ علیہ اپنے زمانہ طالب علمی کا واقعہ بیان کرتے ہیں کہ جس زمانے میں میں مدرسہ نظامیہ بغداد شریف میں زیر تعلیم تھا وہاں میرا ایک ساتھی میرے حسن بیان اور نکتہ آفرینی کے باعث مجھ سے حسد کیا کرتا تھا۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

چشم بصیرت صاحب حال ہے

انسان کی بات اس کے باطن کے حال کی گواہی دیتی ہے۔قرآن مجید کے نور نے حق و باطل میں تفریق پیدا کردی ہے۔صحیح فکر ذات کے نور سے حقیقت بین ہوتی ہے۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

اللہ اور اللہ والوں کی عنایت

جان لو کہ بغیر اللہ اور اللہ والوں کی عنایت کے اگر فرشتہ ہوتو خوشامدیوں سے نہیں بچ سکتا۔ان کے شر سے اس کا اعمال نامہ بھی سیاہ ہو جائے گا۔اے اللہ!اے صاحب قدرت! اسے ہر شے سے مبرا! تو ہر ظاہر و باطن سے آگاہ ہے۔تجھ میں نہ کسی شے کی کمی ہے اور نہ ہی زیادتی۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

تصویر کے ہر رنگ میں…

تصویریں یوں تو خموش ہوتی ہیں، لیکن اگر غور سے دیکھا جائے تو یہ تصویر یں بہت کچھ بیاں کرتی ہیں، عیاں کرتی ہیں۔ بس دیکھنے والی ’ آنکھیں ‘ ہونی چاہییں۔ تصویر کا دوسرا رُخ بھی ہوتا ہے۔ ہم نے زندگی میں کئی تصویروں کو اُلٹ پلٹ کر دیکھا ، لیکن کبھی ہمیں تصویر کا دوسرا رُخ نظر نہ آیا ۔ کہتے ہیں کہ اِس کے دیکھنے کے لیے بھی وہ نظر ہونی چاہیے۔

"مضمون" میں شائع کیا گیا

پھولوں سے سجے خواب

بیٹی کو دھوم دھام سے بیاھنا اسکی سب سے بڑی خواہش تھی،
وہی پھول جو وہ ریڑھی بر بیچتا تھا اُسکی قبر پر پڑے تھے

"مضمون" میں شائع کیا گیا

جون ایلیا۔۔۔

نادرِ روزگار تھے ہم تو: (حصہ ششم)

"مضمون" میں شائع کیا گیا

دعا کا طریقہ

دعا کا طریقہ حضور نبی کریمﷺ نے یہ سکھایا ہے کہ اسے اللہ! مشکل کا آسان کردے دنیا و آخرت میں بھلائی عطا فرما‘صراط مستقیم کو پرلطف بنادے‘ہماری منزل تو خود ہی ہے نفس پر قابو پانے کی وجہ سے دوزخ بھی مومن کے لئے جنت نظر آتی ہے۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا

نفس امارہ انسان کو ذلیل ورسوا کر دیتا ہے

حضرت شیخ سعدی رحمتہ اللہ علیہ بیان کرتے ہیں کہ ایک نیک اور متقی شخص بخار میں مبتلا ہو گیا۔کسی نے اسے مشورہ دیا کہ وہ فلاں شخص سے جس کے پاس عمدہ گل قند ہے تھوڑا سا مانگ لے۔

"حکایات" میں شائع کیا گیا