Khuli Aankhon Ko Koi Band Kar Do

کھلی آنکھوں کو کوئی بند کر دو

کھلی آنکھوں کو کوئی بند کر دو

کھلی آنکھوں کی ویرانی سے ہول آتا ہے

کوئی ان کھلی آنکھوں کو بڑھ کر بند کر دو

یہ آنکھیں اک انوکھی یخ زدہ دنیا کی

ساکت روشنی میں کھو گئی ہیں

اب ان آنکھوں میں

کوئی رنگ پیدا ہے نہ کوئی رنگ پنہاں ہے

نہ کوئی عکس گلبن ہے

نہ کوئی داغ حرماں ہے

نہ گنج شائگاں کی آرزوئے بے نہایت ہے

نہ رنج رائیگاں کا عکس لرزاں ہے

اگر کچھ ہے تو بس

اک یخ زدہ نیا کا نقش جاوداں ہے

یہ آنکھیں

اب شعاع آرزو کی ہر کرن سے یوں گریزاں ہیں

کہ پتھر بن گئی ہیں

یہ آنکھیں مر گئی ہیں

ایاز محمود ایاز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(416) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ayaz Mahmood Ayaz, Khuli Aankhon Ko Koi Band Kar Do in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 21 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ayaz Mahmood Ayaz.