Dars E Aram Meray Zoq E Safar Ne Na Diya

درس آرام میرے ذوق سفر نے نہ دیا

درس آرام میرے ذوق سفر نے نہ دیا

مجھ کو منزل پہ بھی ظالم نے ٹھہرنے نہ دیا

رقص کرتی رہی طوفان میں کشتی میری

میری ہمت نے مجھے پار اترنے نہ دیا

زندگی موت سے بد تر تھی پر اے وعدۂ دوست

لذت کشمکش شوق نے مرنے نہ دیا

ملتفت کل نظر آتی تھیں نگاہیں ان کی

کہیں دھوکا تو مجھے میری نظر نے نہ دیا

یوں تو رہنے کو پریشانیٔ خاطر ہی رہی

تیری زلفوں کو مگر میں نے بکھرنے نہ دیا

پھول تو پھول تھے اے خانہ بر انداز چمن

تو نے کانٹوں سے بھی دامن مجھے بھرنے نہ دیا

انہیں الفاظ میں ہے میری کہانی افضلؔ

غم نے جینے نہ دیا شوق نے مرنے نہ دیا

اعزاز افضل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(513) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ezaz Afzal, Dars E Aram Meray Zoq E Safar Ne Na Diya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 20 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ezaz Afzal.