Yeh Kaisa Rabt Howa Dil Ko Teri Zaat Ke Sath

یہ کیسا ربط ہوا دل کو تیری ذات کے ساتھ

یہ کیسا ربط ہوا دل کو تیری ذات کے ساتھ

ترا خیال اب آتا ہے بات بات کے ساتھ

کٹھن تھا مرحلۂ انتظار صبح بہت

بسر ہوا ہوں میں خود بھی گزرتی رات کے ساتھ

پڑیں تھیں پائے نظر میں ہزار زنجیریں

بندھا ہوا تھا میں اپنے توہمات کے ساتھ

جلوس وقت کے پیچھے رواں میں اک لمحہ

کہ جیسے کوئی جنازہ کسی برات کے ساتھ

کبھی کبھی تو یہ لگتا ہے جیسے یہ دنیا

بدل رہی ہو مرے دل کی واردات کے ساتھ

جو دور سے بھی کسی غم کا سامنا ہو جائے

پکارتا ہے مجھے کتنے التفات کے ساتھ

تڑخ کے ٹوٹ گیا دل کا آئینہ مخمورؔ

پڑا جو عکس فنا پرتو حیات کے ساتھ

مخمور سعیدی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(866) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Makhmoor Saeedi, Yeh Kaisa Rabt Howa Dil Ko Teri Zaat Ke Sath in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 43 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Makhmoor Saeedi.