Dard Aaisa K Sehar Tar E Rag Jaan Khenchey

درد ایسا کہ َسحَرؔ ! تارِ رگِ جـان کِھنچے

درد ایسا کہ َسحَرؔ ! تارِ رگِ جـان کِھنچے

زخمہِ کرب کی لہروں پر ہر اک تان کھنچے

میری مدہوشی بھی ہے ہوش کی سرحد سے ملی

میری حالت پہ کوئی صاحبِ عــرفان کھنچے

ولولے اُس کے بھی سـینے سے نکالے کـوئی

کھینچ کر جان جو کہتا ہے کہ بے جان کھنچے

ایسے کھنچتا ہے نفَـس آ کے میرے سینے میں

جیسے پھـولوں کا بدن کانٹوں پہ ہر آن کھنچے

عقدۂ عقل تخیل کا معمّا ٹھہرا

کیوں نہ قرطاس پہ پھر ســوزنِ عنوان کھنچے

میں وہ غنچہ ہوں جسے اذنِ تبسّم ہی نہیں

میری خاموشی پہ کیوں بابِ گلِستان کھنچے

روز وا ہوتے ہیں حیرت کے کئی دروازے

اب کہاں تک یہ مِرا دیدۂ حیران کھنچے

شائستہ سحر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1084) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Shaista Sehar, Dard Aaisa K Sehar Tar E Rag Jaan Khenchey in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 55 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Shaista Sehar.