Koi Mujh Say Juda Howa Hai Abhi

کوئی مجھ سے جدا ہوا ہے ابھی

کوئی مجھ سے جدا ہوا ہے ابھی

زندگی ایک سانحا ہے ابھی

نہیں موقع یہ پرسش غم کا

دیکھیے دل دکھا ہوا ہے ابھی

کل گزر جائے دل پہ کیا معلوم

عشق سادہ سا واقعہ ہے ابھی

بات پہنچی ہے اک نظر میں کہاں

ہم تو سمجھے تھے ابتدا ہے ابھی

کتنے نزدیک آ گئے ہیں وہ

کس قدر ان سے فاصلہ ہے ابھی

ساری باتیں یہ خواب کی سی ہیں

زندگی دور کی صدا ہے ابھی

دار پر کھینچتے ہیں اخترؔ کو

جرم یہ ہے کہ جی رہا ہے ابھی

اختر سعید خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(179) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Akhtar Saeed Khan, Koi Mujh Say Juda Howa Hai Abhi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 51 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Akhtar Saeed Khan.