Ya Tu Tareekh Ki Azmat Se LipaT Kar So Ja

یا تو تاریخ کی عظمت سے لپٹ کر سو جا

یا تو تاریخ کی عظمت سے لپٹ کر سو جا

یا کسی ٹوٹے ہوئے بت سے چمٹ کر سو جا

ننھا بچہ ہے تو آ ماں کے گھنے آنچل میں

رات کی چھلنی سڑک ہی سے لپٹ کر سو جا

ہر گھڑی شور مچاتی ہوئی مخلوق کے بیچ

اپنے ہونے کے یقیں سے ذرا ہٹ کر سو جا

نیند اڑنے کا مزہ تو بھی چکھا دے ان کو

چال مکار ستاروں کی الٹ کر سو جا

اوڑھ لے سارے بدن پر تو ہوا کی چادر

اور طوفان کی بانہوں میں سمٹ کر سو جا

اے خلیفہ اے نئے وقت کے ہارون رشید

تو روایات شب عدل سے کٹ کر سو جا

ف س اعجاز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(472) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fay Seen Ejaz, Ya Tu Tareekh Ki Azmat Se LipaT Kar So Ja in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 24 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fay Seen Ejaz.