Kam Porana Bohat Naya Tha Faraq

کم پرانا بہت نیا تھا فراق

کم پرانا بہت نیا تھا فراق

اک عجب رمز آشنا تھا فراق

دور وہ کب ہوا نگاہوں سے

دھڑکنوں میں بسا ہوا ہے فراق

شام غم کے سلگتے صحرا میں

اک امنڈتی ہوئی گھٹا تھا فراق

امن تھا پیار تھا محبت تھا

رنگ تھا نور تھا نوا تھا فراق

فاصلے نفرتوں کے مٹ جائیں

پیار ہی پیار سوچتا تھا فراق

ہم سے رنج و الم کے ماروں کو

کس محبت سے دیکھتا تھا فراق

عشق انسانیت سے تھا اس کو

ہر تعصب سے ماورا تھا فراق

حبیب جالب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2042) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Habib Jalib, Kam Porana Bohat Naya Tha Faraq in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Habib Jalib.