Din Bhar Gamoon Ki Dhoop Mein Chalna Para Mujhe

دن بھر غموں کی دھوپ میں چلنا پڑا مجھے

دن بھر غموں کی دھوپ میں چلنا پڑا مجھے

راتوں کو شمع بن کے پگھلنا پڑا مجھے

ٹھہری ہی تھی نگاہ کہ منظر بدل گیا

رکنا پڑا مجھے کبھی چلنا پڑا مجھے

ہر ہر قدم پہ جاننے والوں کی بھیڑ تھی

ہر ہر قدم پہ بھیس بدلنا پڑا مجھے

رنگوں کے انتخاب سے اکتا کے ایک دن

رنگوں کے دائرے سے نکلنا پڑا مجھے

دنیا کی خواہشوں نے مری راہ روک لی

دنیا کی خواہشوں کو کچلنا پڑا مجھے

بارش کچھ اتنی تیز ہوئی اب کے طنز کی

گر گر کے بار بار سنبھلنا پڑا مجھے

ہر آشنا نگاہ یہاں اجنبی لگی

مجبور ہو کے گھر سے نکلنا پڑا مجھے

والی آسی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(536) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of WALI AASI, Din Bhar Gamoon Ki Dhoop Mein Chalna Para Mujhe in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 21 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of WALI AASI.