Sari Omar Ganwa Di Hum Nay

ساری عمر گنوا دی ہم نے

ساری عمر گنوا دی ہم نے

پر اتنی سی بات بھی ہم نہ جان سکے

کھڑکی کا پٹ کھلتے ہی جو

لش لش کرتا

ایک چمکتا منظر ہم کو دکھتا ہے

کیا وہ منظر

کھڑکی کی چوکھٹ سے باہر

سبز پہاڑی کے قدموں میں

اک شفاف ندی سے چمٹے

پتھر پر چپ چاپ کھڑے

اک پیکر کا گم صم منظر ہے

جس کو کھڑکی کے کھلنے نہ کھلنے سے

کچھ غرض نہیں ہے

یا ہم

کھڑکی کے اندر کا منظر دیکھ رہے ہیں

ساری عمر گنوا دی ہم نے

وزیر آغا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(566) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Wazir Agha, Sari Omar Ganwa Di Hum Nay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 101 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Wazir Agha.