Mooj O Gardab Pey Rakhta Hai Safeena Mera

موج و گرداب پہ رکھتا ہے سفینہ میرا

موج و گرداب پہ رکھتا ہے سفینہ میرا

اس کو منظور نہ مرنا ہے نہ جینا میرا

مہر افکار کی ہوتی ہے نوازش جب بھی

ارض قرطاس پہ گرتا ہے پسینہ میرا

مجھ کو آتا ہے عذابوں کا ازالہ کرنا

موم ہے تو کبھی فولاد ہے سینہ میرا

خادم کوچۂ جاں یہ ہے صداقت میری

چند انفاس مقرر ہے مہینہ میرا

فاصلے کی نہیں قائل ہے محبت میری

ساتھیو ہے مرے دل میں ہی مدینہ میرا

وہ نہیں گردش ایام کے در پے راحتؔ

دیکھنا ہے اسے مقصود قرینہ میرا

راحت حسن

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(314) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Rahat Hasan, Mooj O Gardab Pey Rakhta Hai Safeena Mera in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Rahat Hasan.