Ghar Ki Mushkil Koi Hal Chahti Hae

گھر کی مشکل کوئی حل چاہتی ہے

گھر کی مشکل کوئی حل چاہتی ہے

مجھ سے وہ تاج محل چاہتی ہے

کیسی نادان ہے دنیا کی طلب

بیج بویا نہیں پھل چاہتی ہے

انتظار آشنا آنکھوں کی جلن

تیری آنکھوں کے کنول چاہتی ہے

فکر ہے صبح کی دشمن کیسی

رات کی رات غزل چاہتی ہے

بیٹھ جا سامنے اک ناز کے ساتھ

تو مصور کا عمل چاہتی ہے

جس میں ہر چہرے کے ٹکڑے ہو جائیں

آنکھ وہ شیش محل چاہتی ہے

ف س اعجاز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(595) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fay Seen Ejaz, Ghar Ki Mushkil Koi Hal Chahti Hae in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 24 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fay Seen Ejaz.