Mera Dil Keehta Hai Mujh Se Koi Sanam Tarash

میرا دل کہتا ہے مجھ سے کوئی صنم تراش

میرا دل کہتا ہے مجھ سے کوئی صنم تراش

واعظ کہتا ہے ایسا کرنے والے کی گرا دو لاش

تُو چھوڑ مری صنم تراشی ، تُو کر رزق حلال کی تلاش

اپنے دین کو بنا ر کھا ہے تم نے ذریعہٴ معاش

ہم نمک پاشی کر بیٹھے اور لہُو ہو گئی واعظ کی خراش

میں صنم فروشی تو نہیں کرتا ،میں بھی ہوں بہت قلاش

بس یہ رندی و پارسائی کی بحث کو مت چھیڑئیے

لوگ کہتے ہیں کہ واعظ کی حساس طبیعت کو مت چھیڑئیے

اے شبنم تو نہ گرنا اس گیسوئے حسیں پر

اتنی حسین شا ید ہی کوئی زلف ہو روئے زمیں پر

کبھی ہم بھی رکھنا چاہتے تھے اپنے لب اس کی جبیں پر

مرے اشکوں کے داغ لگ گئے اس کے پیرہن سیمیں پر

اپنی آنکھوں سے تیر پھینکے اس نے مرے دل حزیں پر

آہ ظالم تجھے ذرا سا بھی ترس نہ، آیا اپنے دل کے مکیں پر

میرے ہاتھ نہ تری وفا آ ئی نہ ترا دامن آیا

بس پھر کیا تھا کہ میری آنکھوں میں ترے غم کا ساون آیا

شبنم کلیوں کو وضو دیتی ہے اور غسل ہوتا ہے مرغزاروں کا

ہزار جاں تجھ پہ فدا کر کے بھی مجھے غم نہ ہو گا ہزاروں کا

چاند بھی کبھی ہو جاتا ہے محبوب اپنے ستاروں کا

بلبل کے آنسو نکل آئے انتظار کرتے کرتے بہاروں کا

ترے دل میں نہ بہار کی خوشی نہ مزا ا ن نظاروں کا

آہ تو کیا جانے مطلب ان حسینوں کے اشاروں کا

سبھی لوگوں پہ کھلتا نہیں ہے یہ راز کبھی بھی

کہ غم سے ہی کیوں خوش ہوتا ہے دل غمخواروں کا !

سردار زبیر احمد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(306) ووٹ وصول ہوئے

سردار زبیر احمد کی مزید شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Sardar Zubair Ahmed, Mera Dil Keehta Hai Mujh Se Koi Sanam Tarash in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 30 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Sardar Zubair Ahmed.