Maa

ماں

بچوں پہ چلی گولی

ماں دیکھ کے یہ بولی

یہ دل کے مرے ٹکڑے

یوں روئے مرے ہوتے

میں دور کھڑی دیکھوں

یہ مجھ سے نہیں ہوگا

میں دور کھڑی دیکھوں

اور اہل ستم کھیلیں

خوں سے مرے بچوں کے

دن رات یہاں ہولی

بچوں پہ چلی گولی

ماں دیکھ کے یہ بولی

یہ دل کے مرے ٹکڑے

یوں روئیں مرے ہوتے

میں دور کھڑی دیکھوں

یہ مجھ سے نہیں ہوگا

میداں میں نکل آئی

اک برق سی لہرائی

ہر دست ستم کانپا

بندوق بھی تھرائی

ہر سمت صدا گونجی

میں آتی ہوں میں آئی

میں آتی ہوں میں آئی

ہر ظلم ہوا باطل

اور سہم گئے قاتل

جب اس نے زباں کھولی

بچوں پہ چلی گولی

اس نے کہا خوں خوارو!

دولت کے پرستارو

دھرتی ہے یہ ہم سب کی

اس دھرتی کو نا دانو!

انگریز کے دربانو

صاحب کی عطا کردہ

جاگیر نہ تم جانو

اس ظلم سے باز آؤ

بیرک میں چلے جاؤ

کیوں چند لٹیروں کی

پھرتے ہو لیے ٹولی

بچوں پہ چلی گولی

حبیب جالب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(4543) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Maa by Habib Jalib - Read Habib Jalib's best Shayari Maa at UrduPoint. Here you can read the best poetry Maa of Habib Jalib. Maa is the most famous poetry by Habib Jalib. People love to read poetry by Habib Jalib, and Maa by Habib Jalib is best among the whole collection of poetry by Habib Jalib.

Habib Jalib is the most famous Urdu Poet. Therefore, people love to read Urdu Poetry of Habib Jalib. At UrduPoint, you can find the complete collection of Urdu Poetry of Habib Jalib. On this page, you can read Maa by Habib Jalib. Maa is the best poetry by Habib Jalib.

Read the Habib Jalib's best poetry Maa here at UrduPoint; you will surely like it. If we make a list of Habib Jalib's best Shayari, Maa of Habib Jalib will be at the top. Many people, who love the Urdu Shayari of Habib Jalib, regard it as the best poetry Maa of Habib Jalib.

We recommend you read the most famous poetry, Maa of Habib Jalib here, you will surely love it. Also, don't forget to share it with others.