ملتان کی گلیوں ‘ سڑکوں اور علاقوں کی حالت دیکھ کر مایوسی ہوتی ہے،شاہ محمود قریشی

جو پیسہ ملتان کی ترقی پر خرچ ہونا چاہئے تھا وہ میٹرو اور سپیڈو کی خالی بسوں کے ایندھن پر ضائع ہو رہا ہے،اہل ملتان گواہ ہیں کہ دوران اپوزیشن ہمیں ایک روپے کا بھی فنڈ نہیں دیا گیا، وائس چیئرمین تحریک انصاف

منگل مئی 23:39

ملتان(اُردو پوائنٹ اخبار آن لائن۔ منگل مئی ء) پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین مخدوم شاہ محمود قریشی نے گزشتہ روز عوامی رابطہ مہم کے سلسلے میں این ای156 اور این اے 157 کی مختلف یونین کونسلوں کا دورہ کیا جہاں مختلف وفود سے ملاقاتیں کیں۔ اس موقع پر مخدوم شاہ محمود قریشی نے خطاب کرتے ہوئے کہا ملتان کی گلیوں ‘ سڑکوں اور علاقوں کی حالت دیکھ کر مایوسی ہوتی ہے۔

جو پیسہ ملتان کی ترقی پر خرچ ہونا چاہئے تھا وہ میٹرو اور سپیڈو کی خالی بسوں کے ایندھن پر ضائع ہو رہا ہے اگر یہی پیسہ ملتان کی صحت ‘ صفائی ‘ تعلیم پر لگایا جاتا تو ملتان کا نقشہ بدل جاتا۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا اہل ملتان گواہ ہیں کہ دوران اپوزیشن ہمیں ایک روپے کا بھی فنڈ نہیں دیا گیا۔

(جاری ہے)

بلکہ ہمارے حصے کا ترقیاتی فنڈ ن لیگ کے غیر منتخب افراد کو دیا گیا انہوں نے اپنوں کو نوازا ۔

انہوں نے کہا کہ پنجاب میں گزشتہ دس سالوں سے ن لیگ کی حکومت ہے ۔ خادم اعلیٰ پنجاب دعویٰ کرتے ہیں کہ انہوں نے جنوبی پنجاب کو اربوں روپے کے فنڈز دیئے ہیں لیکن میں ان سے سوال کرتا ہوں کہ وہ اربوں روپے کہاں گئے بجٹ میں جنوبی پنجاب کیلئے فنڈز تو ایلوکیٹ کردیئے جاتے ہیں لیکن بعد ازاں فنڈز کی جب منتقلی کا وقت آتا تو وہ فنڈز اپر پنجاب کے ترقیاتی منصوبوں پر صرف کردیئے گئے۔

لاہور بھی ہمارے ملک کا حصہ ہے لیکن میں خادم اعلیٰ سے گزارش کرونگا کہ وہ ملتان آئیں ملتان کی سڑکیں ملتان کی گلیاں ‘ ہسپتال اور سکولوں کا دورہ کریں تو انہیں اپنی کارکردگی نظر آجائیگی۔ انہوں نے کہا کہ نشتر ہسپتال کوئٹہ سے لیکر ملتان تک واحد سب سے بڑا ہسپتال ہے لیکن اہل ملتان کافی عرصے سے کہہ رہے ہیں یہ ان کی ضروریات کیلئے ناکافی ہے۔

کئی بار توسیع کیلئے اعلان ہوئے لیکن آج تک نشتر کا توسیع منصوبہ مکمل نہ ہوسکا۔ مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ماضی میں جنوبی پنجاب کے خطے کو محرومیو ںکے سوا کچھ نہیں دیا گیا ۔یہاں کی عوام احساس کمتری کا شکار ہیں۔ یہاں کے لوگوں کو اپنے مسائل کے حل کیلئے ایک طویل سفر اور کافی اخراجات کرنے کے بعد لاہور جانا پڑتاہے۔ ضرورت اس امر کی ہے کہ یہاں کے عوام کے مسائل عوام کی دہلیز پر حل کئے جائیں۔

تحریک انصاف کو جنوبی پنجاب کے عوام کے مسائل کا پوری طرح سے ادراک ہے اور وہ سمجھتی ہے کہ جنوبی پنجاب کے عوام کے مسائل کا واحد حل یہاں کے لوگوں کو علیحدہ صوبہ بنا کر دینے میںہے اور انشاء اللہ اگر پی ٹی آئی اقتدار میں آئی تو جنوبی پنجاب کو علیحدہ صوبہ بنائینگے۔ اس موقع پر یونین کونسل 56 میں رونگھا برادری نے پی ٹی آئی میں شمولیت کا اعلان کیا۔

حاجی خالد فاروق رونگھا ‘ ملک زبیر مظہر رونگھا‘حاجی صدیق اور ملک ظفر رونگھا نے اپنی برادری اور ساتھیوں سمیت مخدوم شاہ محمود قریشی کی حمایت کا اعلان کیا۔ اس موقع پر رانا عبدالجبار اور دیگر شخصیات موجود تھیں۔ مخدوم شاہ محمود قریشی یونین کونسل راوان کا دورہ کیا جہاں انہوں نے رکن صوبائی اسمبلی ملک مظہر عباس راں کی جانب سے دیئے گئے افطار ڈنر میں شرکت کی۔ مخدوم زادہ زین حسین قریشی ‘ ڈاکٹر اختر ملک ‘ یونین کونسل کے چیئرمین اور وائس چیئرمین ان کے ہمراہ تھے۔مخدوم شاہ محمودقریشی گزشتہ شب ملتان سے اسلام آباد روانہ ہوگئی#

Your Thoughts and Comments