رحمان خاور - Rahman Khawar

Poetry of Rahman Khawar, Urdu Shayari of Rahman Khawar

رحمان خاور کی شاعری

کیا یہ دیکھیں کہ کوئی اور تماشا کیا ہے

Kya Yeh Dekhen Ke Koi Aur Tamasha Kya Hai

(Rahman Khawar) رحمان خاور

ہر منزل میں ہر رستے میں سچ اپنے کام آیا ہے

Har Manzil Mein Har Raste Mein Sach –apne Kaam Aaya Hai

(Rahman Khawar) رحمان خاور

ہم پہ وہ مہرباں زیادہ ہے

Hum Pay Woh Mehrbaan Ziyada Hai

(Rahman Khawar) رحمان خاور

وہ اپنے عشق میں کیسا کمال رکھتا ہے

Woh –apne Ishq Mein Kaisa Kamal Rakhta Hai

(Rahman Khawar) رحمان خاور

وہ انجمن ہو کہ مقتل لہو لہو ہی رہے

Woh Anjuman Ho Ke Maqtal Lahoo Lahoo Hi Rahay

(Rahman Khawar) رحمان خاور

وہ کم یقیں جو سواد گماں بھی رہتا ہے

Woh Kam Yaqeen Jo Swad Guma Bhi Rehta Hai

(Rahman Khawar) رحمان خاور

محبت یہ بتا کیا سلسلہ ہے

Mohabat Yeh Bta Kya Silsila Hai

(Rahman Khawar) رحمان خاور

مرحلے تو زیست کے طے کر لیے

Marhalay To Zeist Ke Tay Kar Liye

(Rahman Khawar) رحمان خاور

ملے ہیں حرف بس اتنے مجھے بیاں کے لیے

Miley Hain Harf Bas Itnay Mujhe Bayan Ke Liye

(Rahman Khawar) رحمان خاور

شام گزری ہے ابھی غم کی سحر باقی ہے

Sham Guzri Hai Abhi Gham Ki Sehar Baqi Hai

(Rahman Khawar) رحمان خاور

غموں سے ہجر کے کچھ ایسے بد حواس رہے

Gamoon Se Hijar Ke Kuch Aisay Bad Hawaas Rahay

(Rahman Khawar) رحمان خاور

محال تھا کہ یہ طوفان رنگ و بو آئے

Mahaal Tha Ke Yeh Tufaan Rang O Bo Aaye

(Rahman Khawar) رحمان خاور

ترے بغیر عجب بام و در کا عالم ہے

Tre Baghair Ajab Baam O Dar Ka Alam Hai

(Rahman Khawar) رحمان خاور

جب نظر جا نہ سکے حد نظر سے آگے

Jab Nazar Ja Nah Sakay Had Nazar Se Agay

(Rahman Khawar) رحمان خاور

سینے میں اک شور مچا ہے

Seenay Mein Ik Shore Macha Hai

(Rahman Khawar) رحمان خاور

تیغ ستم کبھی ہے تو سنگ جفا کبھی

Tegh Sitam Kabhi Hai To Sang Jfaa Kabhi

(Rahman Khawar) رحمان خاور

ادھر بھی آئیں کبھی دھوپ کے ستائے ہوئے

Idhar Bhi Ayen Kabhi Dhoop Ke Sataye Hue

(Rahman Khawar) رحمان خاور

بجھا بھی ہو تو اجالا مری نظر میں رہے

Bujha Bhi Ho To Ujala Meri Nazar Mein Rahay

(Rahman Khawar) رحمان خاور

شب گزر کر بھی اندھیرا کم نہیں

Shab Guzar Kar Bhi Andhera Kam Nahi

(Rahman Khawar) رحمان خاور

شکایتیں نہ زمیں سے نہ آسمان سے ہیں

Shikaytein Nah Zamee Se Nah Aasman Se Hain

(Rahman Khawar) رحمان خاور

ادب نواز تو ہو کوئی فن شناس تو ہو

Adab Nawaz To Ho Koi Fun Shanas To Ho

(Rahman Khawar) رحمان خاور

پاس سے یوں آنچل لہراتے لوگ گزرتے رہتے ہیں

Pas Se Yun Anchal Lehratey Log Guzarte Rehtay Hain

(Rahman Khawar) رحمان خاور

راہ کی دھوپ سے مفر ہی نہیں

Raah Ki Dhoop Se Mafar Hi Nahi

(Rahman Khawar) رحمان خاور

زمین و آسماں سب ایک سے ہیں

Zameen O Asman Sab Aik Se Hain

(Rahman Khawar) رحمان خاور

Records 1 To 24 (Total 41 Records)

Urdu Poetry & Shayari of Rahman Khawar. Read Ghazals, Sad Poetry, Social Poetry of Rahman Khawar, Ghazals, Sad Poetry, Social Poetry and much more. There are total 41 Urdu Poetry collection of Rahman Khawar published online.